The news is by your side.

سپریم کورٹ نے عمران خان کے خلاف توہین عدالت کیس ڈی لسٹ کردیا

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے عمران خان کےخلاف توہین عدالت کیس ڈی لسٹ کردیا ، توہین عدالت کیس کی سماعت کل ہونی تھی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نےعمران خان کے خلاف توہین عدالت کیس ڈی لسٹ کردیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ کیس بینچ کی عدم دستیابی کی وجہ سے ڈی لسٹ کیا گیا۔

سپریم کورٹ میں عمران خان کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کل ہونی تھی۔

یاد رہے سپریم کورٹ میں زیر سماعت توہین عدالت کیس میں پی ٹی آئی چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے اضافی جواب جمع کرایا تھا۔

عمران خان کی جانب سے جمع کرائے گئے جواب الجواب میں کہا گیا تھا کہ کیس میں واحد نقطہ یہی ہے کہ مجھےعدالتی احکامات سے آگاہ کیا گیا یا نہیں۔ بابر اعوان اور فیصل چوہدری کی مجھ سے ملاقات کے احکامات کی انتظامیہ نے خلاف ورزی کی۔ 24 مئی سے پنجاب اور اسلام آباد میں تشدد کی وجہ سے شدید دباؤ میں تھے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کے جواب میں یہ بھی کہا تھا کہ جمیرز کی وجہ سے رابطہ نہ ہونے کا ابھی تک دعویٰ نہیں کیا۔ پہلے جواب میں جیمرز کی موجودگی میں رابطے کے عمل کو غیر حقیقی لکھا ہے۔ الیکٹرانک میڈیا پر پابندی کے باعث سوشل میڈیا کا استعمال لازمی تھا اور سوشل میڈیا سرگرمیاں مختلف جگہوں پر مختلف اکاوئنٹس سے کی جا رہی تھیں۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ مجھے بتایا گیا سپریم کورٹ نے میرے اور سپورٹرز کے آئینی حق کو تسلیم کرلیا۔ ڈی چوک جانے کا فیصلہ حکومتی تشدد کے نتیجے میں کیا تھا۔ ڈی چوک پر جانے کا فیصلہ سپریم کورٹ فیصلے سے پہلے کر چکا تھا۔

سابق وزیراعظم کی جانب سے جمع کرائے گئے جواب میں استدعا کی گئی تھی کہ وزیر اعلیٰ کے پی کاروان کے ہمراہ جیمرز کی دستاویزات جمع کرانے کی اجازت چاہتا ہوں، میرے جواب اور دستاویزات کو ریکارڈ کا حصہ بنایا جائے۔

واضح رہے کہ عمران خان کے خلاف توہین عدالت کیس میں اس سے قبل وزارت داخلہ نے پی ٹی آئی رہنماؤں کی ٹویٹس، ویڈیو پیغام اور کالز کا ریکارڈ جمع کرایا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ عمران خان نے اپنے تحریری جواب میں غلط بیانی کی اور ان کا پہلے ہی ڈی چوک جانے کا منصوبہ تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں