The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے طلال چوہدری کوتوہین عدالت کا نوٹس جاری کر دیا

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے وزیرمملکت برائے داخلہ طلال چوہدری کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کر دیا.

تفصیلات کے مطابق اعلیٰ عدلیہ نے مسلم لیگ ن کے رہنما کو ان کی حالیہ تقریر پر توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا. طلال چوہدری کو6 فروری کوعدالت میں پیش ہونےکا حکم دیا گیا ہے.

یاد رہے کہ جڑانوالا جلسے میں‌ لیگی رہنما نے اعلیٰ عدلیہ اور معزز ججز پر کڑی تنقید کرتے ہوئے سخت الفاظ استعمال کیے تھے.

سپریم کورٹ نے تقریر کا نوٹس لیتے ہوئے وزیر مملکت کو6 فروری کوعدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے.

یاد رہے کہ آج سپریم کورٹ میں جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سینیٹر نہال ہاشمی کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کے بعد انھیں دھمکی آمیز تقریر اور توہین عدالت کیس میں ایک ماہ قید اور پچاس ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی.

توہین عدالت کیس : سپریم کورٹ نےنہال ہاشمی کوایک ماہ قید کی سزا سنادی

نہال ہاشمی کے بعد اب طلال چوہدری کو اعلیٰ عدلیہ کی جانب سے نوٹس جاری کردیا گیا ہے.

شیخ رشید اور فواد چوہدری کا ردعمل

طلال چوہدری کو جاری ہونے والے نوٹس پر تبصرہ کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ طلال چوہدری کا شمار کرائے کے لوگوں‌ میں‌ ہوتا ہے، یہ کونسلر بھی نہیں بن سکتے، طلال چوہدری پرویز الہیٰ‌ کے جلوس کے آگے ڈانس کرتے تھے.

دوسری جانب پی ٹی آئی کے رہنما فواد چوہدری نے نہال ہاشمی اور طلال چوہدری پر کڑی تنقید کرتے ہوئے انھیں نونہال قرار دیا ہے. انھوں‌نے کہا، دونوں رہنما سپریم کورٹ سے متعلق ایسی زبان استعمال کرتے تھے، جیسے گھر میں لوگ دوستوں کے بارے میں استعمال کرتے ہیں.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر ضرور شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں