The news is by your side.

Advertisement

ہمارے پاؤں کیوں سوج جاتے ہیں؟ کیا یہ بیماری تو نہیں؟

پاؤں کی سوجن ایک تکلیف دہ بیماری ہے، یہ کچھ لوگوں کے ایک پاؤں اور کچھ کے دونوں پاؤں میں ہوتی ہے، بعض اوقات یہ اس قدر زیادہ ہوجاتی ہے کہ چلنا پھرنا مشکل ہوجاتا ہے۔

پاؤں کی سوجن مختلف وجوہات کی بناء پر ہوسکتی ہے، پاؤں کی سوزش کی عام علامات مقامی سوجن، جلد کی جلد اور دباؤ کا درد ہیں۔ سوزش ایک معمول کا فطری ردعمل ہوتا ہے جب نرم بافتوں ، پٹھوں یا کنڈلیوں میں خارش یا خراب ہوجاتا ہے۔

اس حوالے سے اے آر وائی نیوز کے پرگرام باخبر سویرا میں فیملی فزیشن ڈاکٹر عظمیٰ حمید نے سننے والوں کوپاؤں کی سوجن اور اس کے علاج سے متعلق تفصیلات بتائیں۔

انہوں نے کہا کہ جسم میں پانی زیادہ ہوجائے تو پاؤں میں ورم ہوجاتا ہے، اس کی وجہ سے بعض اوقات ہاتھ، پاؤں اور چہرہ بھی پھول جاتا ہے، ایسا عموماً لمبے سفر یا زیادہ دیر کھڑے رہنے کی صورت میں ہوتا ہے۔

ڈاکٹر عظمیٰ حمید نے بتایا کہ گرنے یا چلنے پھرنے کی وجہ سے پاؤں پر چوٹ آنے سے پاؤں کی رگوں میں زخم ہوجاتا ہے۔ اس کی وجہ سے خون پاؤں میں جم جاتا ہے جو سوجن وغیرہ کا سبب بنتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ حاملہ عورتوں کے پاؤں میں سوجن ہوسکتی ہے، اس لیے کہ ان کا جسم پانی کا وافر ذخیرہ جمع کرلیتا ہے جس کی وجہ ان کے پاؤں میں سوجن ہوجاتی ہے، بعض خواتین کو ایام مخصوصہ میں بھی ایسا ہوتا ہے تاہم یہ خودبخود ٹھیک ہوجاتا ہے البتہ بعض اوقات یہ کسی بیماری کی علامت بھی ہوسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں