شامی صوبےادلب میں دہشت گردوں کےخلاف جنگ جاری رہے گی‘ روسی صدر -
The news is by your side.

Advertisement

شامی صوبےادلب میں دہشت گردوں کےخلاف جنگ جاری رہے گی‘ روسی صدر

تہران : روس نے ترکی کی شامی صوبے ادلب میں جنگ بندی کی درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردوں کے خلاف جنگ جاری رہے گی۔

تفصیلات کے مطابق شام کے صوبے ادلب میں فوجی کارروائی سے متعلق ایرانی دارالحکومت تہران میں اجلاس ہوا جس میں روس، ترکی اور ایران کے صدور نے شرکت کی۔

اجلاس میں ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کہا کہ شام کے صوبے ادلب میں خون ریزی سے بچنے کے لیے جنگ بندی کی جائے۔

روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے ترک صدر کے جنگ بندی کے مطالبے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف جنگ جاری رہے گی۔

اجلاس میں روس اور ایران کے صدر کا کہنا تھا کہ شامی صدر بشارالاسد کو حق حاصل ہے کہ وہ شام کا مکمل کنٹرول حاصل کریں۔

اقوام متحدہ کے مطابق شام کے صوبے ادلب میں 29 لاکھ لوگ آباد ہیں جن میں 10 لاکھ بچے ہیں اور حملے سے کم از کم آٹھ لاکھ افراد بے گھر ہوں گے۔

شام کا معاملہ: روس کی امریکا کو باز رہنے کی دھمکی

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے شام کے معاملے پر روس نے امریکا کو دھمکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ کسی قسم کی غیر قانونی جارحیت سے باز رہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں