The news is by your side.

Advertisement

افغانستان: طالبان کے دہشت گرد حملے، 41 سیکیورٹی اہلکار جاں بحق

کابل: افغانستان میں طالبان کی جانب سے متعدد حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں 41 سیکیورٹی اہلکار جاں بحق اور دس  زخمی ہوگئے جبکہ افغان فورسز کی جوابی کارروائیوں میں 20 شدت پسند بھی ہلاک ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق افغان صوبے فراہ کے مختلف مقامات پر طالبان نے حملے کیے جس کے باعث اکتالیس قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکار جاں بحق ہوئے، اس دوران پولیس اور طالبان کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں جس سے طالبان کے جنگجوؤں کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔

واقعے سے متعلق افغان حکام کا کہنا تھا کہ شدت پسندوں نے فراہ صوبے کے چار مختلف مقامات پر حملے کیے، جن میں صوبائی دارالحکومت بھی شامل ہے، تاہم اس دوران جھڑپوں میں طالبان کو بھی منہ توڑ جواب دیا گیا۔


افغانستان میں کار بم دھماکہ، 11 بچے جاں بحق، 16 افراد زخمی


دوسری جانب صوبائی گورنر کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ان حملوں میں اکتالیس سیکیورٹی اہلکار ہلاک اور دس زخمی ہوئے ہیں، جبکہ اب تمام مقامات پر جنگجوؤں کے حملوں کو مقابلے کے بعد مکمل طور پر ناکام بنایا جا چکا ہے، البتہ ان جھڑپوں کے نتیجے میں بیس طالبان جنگجو بھی مارے گئے۔

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں افغان صوبے قندھار میں عسکریت پسندوں کی جانب سے کار بم دھماکہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں گیارہ معصوم بچے جاں بحق اور سولہ افراد شدید زخمی ہوگئے تھے جبکہ زخمیوں میں غیر ملکی فوجی اہلکار بھی شامل تھے۔


کابل میں دودھماکے‘ 29 افراد ہلاک ‘ 45 زخمی


یاد رہے کہ رواں سال یکم مئی کو افغانستان میں یکے بعد دیگرے دو دھماکے ہوئے تھے، دارالحکومت کابل کے علاقے ششدرک میں افغان انٹیلیجنس ایجنسی این ڈی ایس کے دفتر کے قریب پہلا جبکہ دوسرا دھماکہ وزارت شہری ترقی اور ہاؤسنگ کے دفتر کے باہر ہوا تھا، جس کے نتیجے میں صحافیوں سمیت 29 افراد جاں بحق اور 45 زخمی ہوگئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں