The news is by your side.

Advertisement

خاتون ٹیچر کو شاگرد سے جنسی تعلقات پر قید کی سزا

میں اچھی عورت ہوں،مجھ سے غلطی ہوگئی جس پر پچتاوا ہورہا ہے، بریٹینی زمورا

واشنگٹن : امریکی عدالت نے ایک خاتون ٹیچر کو 13 سالہ شاگرد کے ساتھ ناجائز جنسی تعلق قائم کرنے کے جرم میں 20 برس قید کی سزا سنا دی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست ایریزونا کی عدالت نے یہ فیصلہ 28 سالہ ٹیچر بریٹینی زامورا کے خلاف ایک ہفتہ قبل سنایا جسے گزشتہ برس گرفتار کیا گیا تھا۔ ریاست ایریزونا سے تعلق رکھنے والی خاتون نے مذکورہ لڑکے (جس کی عمر گزشتہ برس 12 برس تھی) سے گاڑی اور کلاس روم میں بارہا جنسی تعلق قائم کیا۔

برطانوی خبر رساں ادارے مررکی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بریٹینی نے عدالت میں دو مرتبہ شاگرد کے ساتھ زیادتی کرنے اور دس مرتبہ رضا جنسی تعلق قائم کرنے کا اعتراف کیا تھا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ خاتون لڑکے کو فحش مواد و ویڈیوز بھی ارسال کرتی رہتی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ خاتون ٹیچر کا مکروہ چہرہ اس وقت کھلا جب کم سن طالب علم کے والدین نے اپنے بیٹے کے رویّے میں تبدیلی محسوس کی۔

چھٹی جماعت کے طالب علم کے والدین نے اپنے بچے میں تبدیلی کانوٹس لینے کے بعد اس کے موبائل میں مانیٹرنگ سافٹ ویئر اسٹال کردیا تھا جس سے خاتون استاد کا چہرہ بے نقاب ہوا۔

لڑکے کی والدہ نے عدالت میں بیان دیا کہ ’میرا بیٹا بہت معصوم تھا بریٹینی نے اس کی معصومیت ختم کرکے میرے خاندان کے ساتھ جو سلوک کیا ہے اس کی وجہ سے مجھے اس سے نفرت ہوگئی ہے‘ بریٹینی مزید میرے بیٹے کی زندگی برباد نہیں کرسکتی، اب اس کی جوانی کا بڑا حصّہ قید میں گزرے گا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ عدالت نے گواہوں، ثبوتوں اور خاتون ٹیچر کے اعتراف جرم کے بعد بیس سال قید کی سزا سنا دی اور اس دوران اسے پیرول بھی نہیں مل سکتی۔

گرفتار ٹیچر نے عدالت میں اپنی حرکت پر پچتاوے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’میں ایک اچھی عورت ہوں جس سے کمیونٹی کو کوئی خطرہ نہیں لیکن مجھ سے غلطی ہوگئی جس پر میں بہت پچتا رہی ہوں اور دل سے معافی مانگتی ہوں‘۔

برطانوی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ امریکا میں پہلے بھی ایک 38 سالہ خاتون ٹیچر کو 11 سالہ بچے کے ساتھ 100 سے زائد مرتبہ جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کےجرم میں سزا سنائی جاچکی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں