The news is by your side.

Advertisement

گھر میں خوفناک آتشزدگی، 4 بچے جل کر مرگئے، ماں صدمے سے بے ہوش

قاہرہ : مصرکے معروف شہر الجیزہ کے ایک فلیٹ میں ہونے والی خوفناک آتشزدگی کے نتیجے میں 4 بچے جان کی بازی ہار گئے، ہیبت ناک واقعے کے بعد پورے علاقے میں رنج وغم کی لہر دوڑ گئی۔

مرنے والے بچوں میں سب سے بڑے کی بچے کی عمر 8 برس تھی، مصری جریدے الوطن کے مطابق پبلک پراسیکیوشن نے ہیبتناک آتشزدگی کے اسباب کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ الیکٹرانک خرابی کی وجہ سے فلیٹ میں آگ لگی جس سے 4 بچوں کی موت واقع ہوئی- ان میں سب سے کم عمر 2 سالہ تھا۔

مصری میڈیا نے تفصیلات جاری کرتے ہوئے کہا کہ متاثرہ فلیٹ کے پڑوسی آگ کے شعلے دیکھ کر گھبرا گئے اور فوری طور پر پولیس کو آگاہ کیا۔

فلیٹ میں ایک خاتون اپنے 4 بچوں کے ہمراہ سکونت پذیر تھی، فلیٹ سے دھواں نکل رہا تھا، انہوں نے دروازہ توڑ کر آگ بجھانے کی کوشش کی- اسی دوران خاتون خانہ کی چیخ و پکار پر متوجہ ہوئے جو چلا چلا کر کہہ رہی تھی کہ اس کے چاروں بچے فلیٹ میں ہیں۔

پڑوسیوں نے انہیں تلاش کیا اور انہیں فلیٹ سے باہر نکال لائے، ہمسایوں نے دیکھا کہ سب سے چھوٹا بچہ مر چکا ہے جبکہ دیگر بچیوں کو پرائیویٹ کار سے قریب ترین اسپتال لے جایا گیا مگر وہ بھی وہاں پہنچنے تک دھوئیں سے متاثر ہوکر ہلاک ہوچکی تھیں۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ زبردست دھوئیں کی وجہ سے وہ شروع میں فلیٹ میں داخل نہیں ہوسکے، پہلے انہوں نے پوری بلڈنگ کا بجلی کنکشن کاٹا اور اس کے بعد آگ بجھانے کے لیے فلیٹ میں داخل ہونے کی ہمت کی۔

ایک پڑوسی بھی شیرخوار کی لاش کو فلیٹ سے نکالتے ہوئے جھلس گیا، ایمبولینس اور سیکیورٹی فورس کے اہلکار مدد کے لیے بعد میں پہنچے۔

ایک عینی شاہد نے توجہ دلائی کہ آگ سے پورا فلیٹ تباہ ہوگیا، ماں اپنے شیر خوار کی نعش اور تینوں بیٹیوں کی بری حالت دیکھ کر صدمہ میں چلی گئی اور بے ہوش ہوگئی، متوفی بچوں کی والدہ نے میڈیا کو بتایا کہ وہ طلاق یافتہ خاتون ہے اور گزشتہ 10 ماہ سے متاثرہ فلیٹ میں رہائش پذیر تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں