کوئٹہ میں ایف سی سینٹر پر حملہ، جوابی کارروائی میں 5 دہشت گرد ہلاک
The news is by your side.

Advertisement

کوئٹہ میں ایف سی سینٹر پر حملہ، جوابی کارروائی میں 5 دہشت گرد ہلاک

پانچ خودکش حملہ آوروں نے ایف سی سینٹر میں داخل ہونے کی کوشش کی جنہیں مار دیا گیا، آئی ایس پی آر

کوئٹہ: بلوچستان کے دارالحکومت کوئلہ پھاٹک کے قریب پانچ خود کش حملہ آوروں نے ایف سی سینٹر پر حملے کی کوشش کی جسے سیکیورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ناکام بنا دیا، فورسز کی جوابی فائرنگ سے پانچ دہشت گرد ہلاک ہوئے جبکہ 4 جوان مقابلے میں زخمی بھی ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ میں واقع چمن ہاؤسنگ اسکیم کے قریب ایف سی کے مددگار سینٹر پر دہشت گردوں نے حملہ کیا جس کے بعد تین دھماکے اور فائرنگ کی آوازیں سنی گئیں۔

سیکیورٹی فورسز کی بھاری نفری نے جائے وقوعہ کو گھیرے میں لیا اور جوابی فائرنگ میں 2 حملہ آوروں کو مار گرایا، پاک فوج کے دستے بھی صورتحال کو قابو کرنے کے لیے ایف سی کے مدد گار سینٹر پہنچے۔

اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرداخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی کا کہنا تھا کہ چمن ہاؤسنگ سوسائٹی کے ساتھ واقع عسکری پمپ پر دھماکوں کی اطلاع موصول ہوئی، لگتاہےکل کےآپریشن سےفراردہشتگروں نے آج حملہ کیا۔

اُن کا کہنا تھا کہ دھماکوں کی نوعیت، نقصان سےمتعلق کچھ کہنا قبل ازوقت ہے تاہم سیکیورٹی فورسز کی بھاری نفری اور ریسکیو عملے کی گاڑیاں جائے وقوعہ پر پہنچ چکی ہیں۔

آئی ایس پی آر اعلامیہ

پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ سے جاری بیان کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردی کی بڑی کاررائی ناکام بنا دی، دہشت گردوں نے ایف سی سینٹر پر حملے کی کوشش کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق خود کش حملہ آور دھماکا خیز مواد سے بھری گاڑی میں بیٹھ کر ایف سی سینٹر میں داخل ہونا چاہتے تھے تاہم سیکیورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کی اور پانچوں دہشت گردوں کو مار گرایا، مارے گئے خود کش حملہ آور بظاہر افغان شہری معلوم ہوتے ہیں۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق دہشت گردوں کی فائرنگ سے چار جوان زخمی ہوئے جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا جبکہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کی صورتحال کو کنٹرول کرلیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں