The news is by your side.

Advertisement

تھرپارکر: مضر صحت کھانا کھانے سے دو بچے جاں بحق

تھرپارکر: غذائی قلت کا شکار سندھ کے ضلع تھرپارکر میں مضر صحت کھانا کھانے سے دو بچے جاں بحق ہوگئے ہیں۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق واقعہ تھرپارکر کی تحصیل کلوئی میں پیش آیا، جہاں مضر صحت کھانا کھانے سے اڑتیس افراد بے ہوش جبکہ دو بچے جاں بحق ہوئے، واقعے کے بعد امدادی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچی اور بے ہوش افراد کو طبی امداد کے لئے قریبی اسپتال منتقل کیا، جہاں انہیں طبی امداد دی جارہی ہے۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق بے ہوش افراد میں سے سات کی حالت تشویشناک ہے، جنہیں مٹھی کے سول اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کلوئی میں ایک ماہ کے دوران مضر صحت کھانا کھانے کا یہ دوسرا واقعہ ہے، اس سے قبل ہونے والی واقعے میں بھی دو افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: تھر: غذائی قلت و امراض کے باعث مزید پانچ بچے دم توڑ گئے

یاد رہے کہ تھرپارکر میں غذائی قلت اور صحت کی ناکافی سہولتوں کے سبب نومولود بچوں کی اموات کا سلسلہ تاحال بند نہیں ہوا ہے، تھر میں بچوں‌ کی ہلاکت کے معاملے پر حکومت سندھ کو شدید تنقید کا سامنا ہے، مخالفین ایسے واقعات کو پی پی پی سرکار کی غفلت قرار دیتے ہیں، البتہ پارٹی کا موقف ہے کہ یہ صرف پروپیگنڈا ہے، حکومت تھر کی ترقی کے لیے سنجیدہ اقدامات کر رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں