The news is by your side.

Advertisement

سیاہ فام کی ہلاکت، اقوام متحدہ میدان میں آگیا

نیویارک: اقوام متحدہ کے سیکریٹرل جنرل انتونیو گوتریس نے امریکا میں پرتشدد مظاہروں پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انتظامیہ کو تحمل سے کام لینا چاہیے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق انتونیو گوتریس نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اپنے میزبان ملک اور شہر نیویارک میں سڑکوں پر تشدد دیکھ کر میرا دل دکھ رہا ہے۔

انہوں نے ٹرمپ انتظامیہ اور احتجاج کرنے والوں سے اپیل کی کہ مظاہروں کے ردعمل میں حکومت صبر وتحمل سے کام لے اور مظاہرین بھی پرامن رہیں، نسل پرستی ایک نفرت ہے جسے ہم سب کو مسترد کرنا چاہیے۔

خیال رہے کہ امریکا بھر میں احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ بدستور جاری جاری ہے۔ کئی شہروں میں مظاہرین نے کرفیو توڑ دیا اور سڑکوں پرنکل آئے۔ واشنگٹن ڈی سی، نیویارک، ہیوسٹن، شکاگو اور لاس اینجلس کی سڑکوں پر مظاہرے ہورہے ہیں۔ وائٹ ہاؤس کے باہر بھی گزشتہ روز پولیس تشدد کے بعد آج پھر شہری جمع ہوگئے۔

میں نے سیاہ فاموں کی فلاح کے لیے مثالی اقدامات کیے‘ ڈونلڈ ٹرمپ

پولیس نے کرفیو پر عمل درآمد کی اپیل کی جبکہ مظاہرین نے ٹرمپ کے خلاف نعرے بازی کی۔ مظاہرین نے مقتول جارج فلوئیڈ سے اظہاریکجتہی اور قاتلوں کو سزا دینے کا مطالبہ کیا۔ واضح رہے کہ سیاہ فام جارج فلوئیڈ کو پولیس اہلکاروں نے 25مئی کو دوران حراست قتل کیا تھا۔ برطانیہ، آسٹریلیا سمیت کئی ملکوں میں احتجاج کا دائرہ پھیل گیا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں