The news is by your side.

شہید ارشدشریف کے قتل کی ایف آئی آر سامنے آگئی

اسلام آباد: شہید ارشدشریف کے قتل کی ایف آئی آر سامنے آگئی۔ ایف آئی آر ایس ایچ او تھانہ رمنہ کی مدعیت میں درج ہوئی ہے۔

مقدمہ متن میں کہا گیا ہے کہ ارشد شریف کی میت 26 اکتوبر کو بیرون ملک سے پاکستان پہنچی تو میڈیکل بورڈ سے ارشدشریف کا پوسٹ مارٹم کرایا گیا ارشدشریف کی پوسٹ مارٹم رپورٹ ورثا کے حوالےکی گئی۔

ارشدشریف قتل کی رپورٹ 26 اکتوبر کو زیردفعہ 174کے تحت درج کی گئی۔ ایف آئی آر کے مطابق ارشدشریف کی موت آتشی اسلحےکی گولی لگنےسےہوئی، پوسٹ مارٹم رپورٹ کےمطابق ارشد شریف کو کینیا میں قتل کیا گیا۔

ایف آئی آر میں خرم احمد اور طارق احمد وصی کو نامزد کیا گیا ہے اور تفتیش ہومی سائیڈیونٹ کےحوالےکی جا رہی ہے۔

واضح رہے کہ پولیس نے شہید صحافی ارشد شریف کے قتل کی ایف آئی آر والدہ کی مدعیت کے بغیر ہی درج کی ہے۔

سپریم کورٹ کے حکم کے بعد ارشد شریف کی والدہ نے کہا تھا کہ میرا بیٹا قتل ہوا ہے ایف آئی آر میں درج کراؤں گی حکومت میری مدعیت میں بیٹے کے قتل کی ایف آئی آردرج کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں