The news is by your side.

Advertisement

غلاف کعبہ کے نچلے حصے کو زمین سے تین میٹر بلند کردیا گیا

مکہ المکرمہ: حرمین شریفین امور کی انتظامیہ کی جانب سے گزشتہ روز غلاف کعبہ کے نچلے حصے کو زمین سے تین میٹر بلند کردیا گیا۔

عرب میڈیا کے مطابق غلاف کعبہ کے نچلے حصے کو زمین سے تین میٹر بلند کرنے کے ساتھ ہی چاروں طرف سے سفید کاٹن کے کپڑے سے ڈھانپ دیا گیا جس کا عرض دو میٹر کے قریب ہے۔

غلاف کعبہ یعنی کسوہ سے متعلق کنگ عبدالعزیز کمپلیکس کے ڈائریکٹر جنرل احمد بن محمد المنصوری کے مطابق رواں برس 1439 ہجری میں بھی حج سیزن کے لیے انتظامیہ حسب معمول اپنے منصوبے پر عمل پیرا ہے۔

کسوہ کو زمین سے بلند کرنے کے اقدام کا مقصد غلاف کعبہ کی صفائی برقرار رکھنا اور اس کی حفاظت کو یقینی بنایا ہے، حج سیزن میں حجاج کرام کی ایک بڑی تعداد غلاف کعبہ کو چھونے اور اس سے لپٹنے کی خواہش مند ہوتی ہے جس کے نتیجے میں غلاف کو کچھ نقصان بھی پہنچتا ہے۔

احمد بن محمد المنصوری نے باور کرایا ہے کہ بعض حجاج کرام غلاف کعبہ کا کچھ حصہ کاٹنے اور غلاف کعبہ سے برکت حاصل کرنے کی کوشش کرتے ہیں، اُن کا یہ قدم غلط نظریات کا حامل ہے، اسی لیے غلاف کو تین میٹر بلند کردیا جاتا ہے اور حج سیزن کے بعد اسے دوبارہ ویسے ہی کردیا جاتا ہے۔

المنصوری کا مزید کہنا تھا کہ کنگ عبدالعزیز کمپلیکس پورے سال غلاف کعبہ کی خصوصی دیکھ بھال کی ذمے داری انجام دیتا ہے جس کی ہدایت خادم حرمین شریفین کی جانب سے دی گئی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں