The news is by your side.

Advertisement

چین اور امریکا کے درمیان تاریخ کی سب سے بڑی تجارتی جنگ

واشنگٹن: چین اور امریکا کے درمیان تاریخ کی سب سے بڑی تجارتی جنگ جاری ہے، جہاں دونوں ملکوں کی جانب سے ایک دوسرے کی درآمدات پر اضافی ٹیکس لگائے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چین اور امریکا کے درمیان تجارتی جنگ اب شدت اختیار کرچکی ہے، دونوں ملکوں نے ایک دوسرے کی مصنوعات پر اربوں ڈالر کے نئے درآمدی محصولات عائد کر دیے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چینی برآمدات پر نئے امریکی درآمدی ٹیکس لگائے جانے کے بعد جواباًﹰ چین نے بھی اپنے ہاں امریکی درآمدات پر جمعہ چھ جولائی سے 34 ارب ڈالر مالیت کے اضافی محصولات عائد کر دیے ہیں۔


امریکی صدر کا یورپی کاروں پر محصولات کا عندیہ، جرمن چانسلر کی تنبیہ


قبل ازیں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے گذشتہ دنوں چین پر اضافی محصولات عائد کرنے کا اعلان کیا تھا جس کا اطلاق 5 جون سے ہوچکا ہے، جبکہ چین کی جانب سے امریکی درآمدی مصنوعات پر اضافی ٹیکس کا اطلاق آج سے ہوا ہے۔

خیال رہے کہ امریکا دنیا کی سب سے بڑی معیشت ہے جس کے بعد دوسرے نمبر پر چین کا نام آتا ہے۔ ماہرین کے مطابق واشنگٹن اور بیجنگ کے ایک دوسرے کے خلاف مجموعی طور پر 68 ارب ڈالر مالیت کے ان اقدامات سے ایک بڑی تجارتی جنگ شدید تر ہو گئی ہے۔


کینیڈا نے امریکی درآمدی مصنوعات پر اضافی محصولات عائد کر دیے


واضح رہے کہ 2017 میں چین اور امریکا کے مابین مصنوعات کی جتنی بھی تجارت ہوئی تھی، اس میں امریکا کو 375 ارب ڈالر کا نقصان ہوا تھا، جو ایک نیا ریکارڈ تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں