The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: عالمی ادارہ صحت نے نئے خطرے سے آگاہ کردیا

جنیوا: عالمی ادارہ صحت نے نوجوانوں میں کروناوائرس کے پھیلاؤ سے متعلق تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی یہ نہ سمجھے کہ وبا انہیں اپنا شکار نہیں بنائے گی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ڈبلیو ایچ او کے ریجنل ڈائریکٹر برائے یورپ ڈاکٹر ہانس نے خبردار کیا ہے کہ کرونا کے حوالے سے پابندیوں میں نرمی کے بعد خاص طور پر نوجوان خود کو کرونا کے خلاف مضبوط تصور کررہے ہیں، دراصل مہلک وائرس ان پر بھی حملہ کررہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 24 سال کے کم عمر افراد میں کرونا کا تیزی سے پھیلاؤ شدید تشویش کا باعث ہے، کرونا کا خطرہ کم ہونے کا مطلب یہ نہیں کہ وائرس مکمل طور پر ختم ہوگیا، وبا طوفان کی طرح جسم پر چمٹ سکتی ہے۔

کرونا وائرس 2 سال تک جاری رہ سکتا ہے، عالمی ادارہ صحت

ڈاکٹر نے کہا کہ نوجوانوں کے مقابلے میں بڑے عمر کے افراد کرونا سے زیادہ ہلاک ہوئے لیکن اس کا ہرگز یہ معنیٰ نہیں کہ وائرس کم عمر افراد کے لیے ختم ہوگیا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ تین ماہ کے دوران 15 سے 24 سال کے افراد میں کرونا کا پھیلاؤ تین گنا زیادہ دیکھا گیا۔ ماہرین نے نوجوانوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ پارٹی اور تفریحی منصوبہ بندیاں ترک کردیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں