The news is by your side.

Advertisement

کراچی ٹیسٹ، عابد علی اور شاند مسعود کی سنچریاں، پاکستان کی پوزیشن مستحکم

کراچی: نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے روز عابد علی اور شان مسعود کی سنچریوں کی بدولت سری لنکا کے خلاف پاکستان کی پوزیشن مستحکم ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ کے تیسرے روز کھیل کے اختتام پر پاکستان نے 2 وکٹوں پر 395 رنز بنالیے، اظہر علی 57 اور بابر اعظم 22 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں۔

اوپنر عابد علی 174 رنز کی شاندار اننگز کھیل کر اؤٹ ہوئے، شان مسعود نے بھی 135 رنز کی ذمہ دارانہ اننگز کھیلی۔

پاکستان کو دوسری اننگز میں سری لنکا پر315 رنز کی برتری حاصل ہوگئی، شان مسعود اور عابد علی نے سنچریاں اسکور کیں، عابد علی کیریئر کے ابتدائی 2 ٹیسٹ میں سنچری کرنے والے پہلے پاکستانی بن گئے، انہوں  نے 137گیندوں پر سنچری بنائی۔

سری لنکا کے خلاف پاکستان کی پہلی وکٹ 278 رنز پرگری، شان مسعود 135رنز بناکر لہیروکمارا کی گیند پر آؤٹ ہوئے، جبکہ دوسری وکٹ 355 رنز پرگری، عابد علی ایل بی ڈبلیو آوٹ ہوئے، ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کی دوسری بڑی اوپننگ شراکت شان مسعود اور عابد نے 278 رنز کی قائم کی۔

قومی ٹیم نے کھانے کے وقفے تک 175 رنز بنائے تھے، عابد علی اور شان مسعود نے محتاط آغاز کیا، سری لنکا کی ٹیم پہلی اننگز میں 271 رنز بناکر آؤٹ ہوگئی تھی، مہمان ٹیم نے پہلی اننگز میں 20 رنز کی برتری حاصل کی۔

پاکستان نے دوسرے روز ہی اپنی دوسری اننگز کا آغاز کردیا تھا اور بغیر کسی نقصان کے 57 رنز بنائے تھے۔

قبل ازیں سری لنکا نے اپنی پہلی اننگز 64 رنز 4 وکٹوں کے نقصان پر شروع کی تو 78 رنز کے مجموعی اسکور پر لیستھ 13 رنز بنا کر محمد عباس کی گیند پر حارث سہیل کو کیچ دے بیٹھے، دنیش چندی مل نے 74 رنز کی شاندار اننگز کھیلی انہیں حارث سہیل نے آؤٹ کیا، ڈی سلوا 32 رنز بنا کر شاہین شاہ آفریدی کا نشانہ بنے، ڈک ویلا کو 21 رنز پر محمد عباس نے بولڈ کیا تھا۔

کراچی ٹیسٹ، سری لنکا 271 رنز پر آؤٹ، پاکستان کے بغیر کسی نقصان کے 57 رنز

دلروان پریرا نے 48 رنز کی اننگز کھیلی، کمارا بغیر کوئی رن بنائے پویلین لوٹ گئے تھے۔

پاکستان کی جانب سے شاہین شاہ آفریدی نے 5 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی، محمد عباس نے چار اور حارث سہیل نے ایک وکٹ حاصل کی۔ واضح رہے کہ دو روز قبل قومی ٹیم نے اپنی پہلی اننگز میں 191 رنز پر ڈھیر ہوگئی تھی، بابر اعظم اور اسد شفیق نے نصف سنچریاں اسکور کی تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں