The news is by your side.

Advertisement

بھارت کی آبی دہشت گردی، زہریلا پانی چھوڑنے سے ہزاروں مچھلیاں مرگئیں

منچن آباد: کنٹرول لائن پر اشتعال انگیزیوں کے بعد بھارت باز نہ آیا اور آبی جارحیت شروع کردی، دریائے ستلج ہیڈ سلیمانکی کے مقام پر بھارت نے زہریلہ پانی چھوڑدیا جس سے ہزاروں مچھلیاں مرگئیں۔

تفصیلات کے مطابق ‎منچن آباد میں دریائے ستلج ہیڈ سلیمانکی کے مقام پر بھارت نے آبی جارحیت کرتے ہوئے دریائے ستلج ہیڈ سلیمانکی کے مقام پر زہریلا پانی چھوڑا، جس کے باعث ہزاروں مچھلیاں مری، واقعے کا خوفناک عنصر یہ ہے کہ زہریلے پانی سے متاثرہ مچھلیاں بہاولنگر، لاہور اور دیگر شہروں میں تقسیم کی جاچکی ہیں، جو کہ انسانی صحت کے لئے انتہائی خطرناک ہوسکتی ہیں۔

اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ دریائےستلج ہیڈسلیمانکی میں زہریلے پانی کے باعث مرنے والی ہزاروں مچھلیوں کی ترسیل کو فوری طور پر روکا جائے، متاثرہ مچھلیاں انسانی صحت کیلئےخطرناک ہوسکتی ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں:  بھارت کی آبی دہشت گردی : دریائے چناب میں پانی چھوڑ دیا گیا

اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال بھی اسی طرح ہزاروں مچھلیاں مر گئی تھیں، انہوں نے حکام سےزہریلی مچھلیوں کی تقسیم روکنےکامطالبہ کیا ہے۔

بھارت کی جانب سے اپنی آبی جارحیت کوئی نہیں بات نہیں، بھارت وقفے وقفے سے اس طرح کے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرتا رہتا ہے، گذشتہ سال دریائے چناب میں بھی بھارت کی جانب سے پانی چھوڑا گیا تھا، جس کے باعث دریائے چناب میں درمیانے درجے کا سیلاب آیا تھا اور کئی علاقے زیر آب آگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں