تازہ ترین

فیض آباد دھرنا : انکوائری کمیشن نے فیض حمید کو کلین چٹ دے دی

پشاور : فیض آباد دھرنا انکوائری کمیشن کی رپورٹ...

حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا

حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں...

سعودی وزیر خارجہ کی قیادت میں اعلیٰ سطح کا وفد پاکستان پہنچ گیا

اسلام آباد: سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان...

حکومت کل سے پٹرول مزید کتنا مہنگا کرنے جارہی ہے؟ عوام کے لئے بڑی خبر

راولپنڈی : پیٹرول کی قیمت میں اضافے کا امکان...

نئے قرض کیلئے مذاکرات، آئی ایم ایف نے پاکستان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

واشنگٹن : آئی ایم ایف کی منیجنگ ڈائریکٹر کرسٹیلینا...

وفاق کے بعد بلوچستان میں بھی حکومت سازی کے معاملات طے پاگئے

اسلام آباد : وفاق کے بعد بلوچستان میں بھی حکومت سازی کے معاملات طے پاگئے ، پی پی اور ن لیگ کو 6 ،6 وزاتیں جبکہ بلوچستان عوامی پارٹی کو دو وزارتیں ملیں گی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے درمیان وفاق کے بعد بلوچستان میں بھی معاملات طے پاگئے ، پیپلزپارٹی، ن لیگ اور بلوچستان عوامی پارٹی (بی اے پی) مل کر حکومت بنائیں گے۔

جس کے تحت وزیراعلیٰ پیپلزپارٹی اور سینیئر وزیرن لیگ کا ہوگا جبکہ ن لیگ اور پی پی 6،6 اور باپ کے 2 وزیر ہوں گے۔

ذرائع نے بتایا کہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن سے مشیروں کا تقرر کیا جائے گا، گورنر بلوچستان کی تعیناتی پاکستان مسلم لیگ ن سے کی جائے گی اور اسپیکر بلوچستان اسمبلی ن لیگ جبکہ ڈپٹی اسپیکر پیپلز پارٹی سے ہوگا۔

اطلاعات میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ایک سے دو روز میں حکومت سازی کے معاملات کو حتمی شکل دینے کے بعد وزیر اعلیٰ کے نام کا اعلان کر دیا جائے گا۔

گذشتہ روز بلوچستان حکومت میں سازی کے لیے ن لیگ نے جے یوآئی ف سے معذرت کرلی تھی، جس کے بعد جے یوآئی کو بلوچستان میں 11 نشستوں کے باوجود اپوزیشن میں بیٹھناہوگا۔

خیال رہے ن لیگ اورپی پی کی مخصوص نشستوں سمیت 17،17 نشستیں ہیں اور وزیراعلیٰ کے لئے بلوچستان میں 33 ارکان درکارہیں جبکہ ن لیگ اور پی پی کے پاس 34ارکان پہلےسے موجود ہیں۔

ن لیگ یا ی پی جےیوآئی شامل کرتے ہیں توحکومت میں حصہ بھی دیناہوگا تاہم ن لیگ اورپی پی دونوں جےیوآئی کواپنےحصےسےکچھ دینے کو تیار نہیں۔

Comments

- Advertisement -