The news is by your side.

Advertisement

انگوٹھوں کے نشان کی مدد سے لاکھوں بٹورنے والے ملزمان گرفتار

لاہور: صوبہ پنجاب کے شہر اوکاڑہ سے ایسے ڈکیتوں کو گرفتار کیا گیا ہے جو لوگوں کے انگوٹھے کے نشانات کی مدد سے مختلف اداروں سے لاکھوں روپے بٹور رہے تھے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب کے شہر اوکاڑہ سے ہوشیار چوروں کا ایک گروہ گرفتار کیا گیا ہے جو نہایت جدید طریقے سے ڈکیتی کی وارداتیں انجام دے رہا تھا۔

مذکورہ ملزمان سادہ لوح اور غریب و نادار افراد سے مختلف حیلوں بہانوں سے سادہ کاغذ پر انگوٹھوں کے نشان لیتے اور ان نشانات کو مختلف قسم کی دھوکے بازیوں میں استعمال کرتے۔

ان افراد کے انگوٹھوں کے نشان کی مدد سے ملزمان نے کئی فلاحی و سماجی تنظیموں سے ماہانہ خیراتی رقوم لینے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا تھا۔

اوکاڑہ پولیس کی کارروائی کے بعد ملزمان کے قبضے سے لیپ ٹاپس، بائیو میٹرک مشینیں، سیلیکون پر چھپے ہوئے فنگر پرنٹس، 350 سم کارڈز اور لاتعداد اے ٹی ایم کارڈز برآمد ہوئے۔

ایس پی انویسٹی گیشن اوکاڑہ عبداللہ نے اے آر وائی نیوز کے مارننگ شو باخبر سویرا میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ملزمان سادہ لوح افراد کو جھانسہ دے کر ان کے انگوٹھوں کے نشان لیتے اور اس سے موبائل فون کی سم رجسٹر کرواتے۔

بعد ازاں ان سمز کی مدد سے مختلف حکومتی پروگرامز جیسے احساس کفالت پروگرام اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے ان افراد کے نام پر رقم بٹوری جاتی۔

ایس پی انویسٹی گیشن کے مطابق اس گروہ کے ارکان پورے پنجاب میں پھیلے ہوئے ہیں جنہیں پکڑنے کے لیے کام کیا جارہا ہے۔

علاوہ ازیں اس کیس میں وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) اور نادرا سے بھی مدد لی جارہی ہے، اگلے مرحلے میں پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کی ہدایت کے بعد ٹیلی کام کمپنیوں کو بھی اس میں شامل کیا جائے گا تاکہ مستقبل میں ایسے جرائم سے بچا جاسکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں