جمعہ, جون 21, 2024
اشتہار

ٹک ٹاک بنانے والوں کیلئے نئی ہدایات جاری

اشتہار

حیرت انگیز

دنیا کی مقبول ترین اور مختصر ویڈیوز کی سوشل میڈیا ایپلی کیشن ٹک ٹاک انتظامیہ نے ویڈیوز بنانے اور اپ لوڈ کرنے سے متعلق نئی اور اہم ہدایات جاری کردیں۔

ٹک ٹاک انتظامیہ نے اپنی نئی کمیونٹی گائیڈ لائنز میں اس بات آگاہ کیا ہے کہ اب خطرناک اقسام کی ڈائٹ، ادویات کے استعمال، جنسی استحصال، تشدد اور نفرت انگیز مواد سمیت مختلف موضوعات کے مواد کو فار یو فیڈ میں نہیں دکھایا جائے گا۔

اس کے علاوہ 13 سال سے کم عمر بچوں کے اکاؤنٹ پر مواد کو انتہائی محدود کرکے صرف بچوں کے لیے موزوں مواد کو دکھایا جائے گا۔

- Advertisement -

جاری گائیڈ لائنز کے مطابق ٹک ٹاک پر مذکورہ تمام موضوعات پر نہ صرف بچے بلکہ بالغ افراد کی فار یو فیڈ پر بھی مواد نہیں دیکھ سکیں گے اور ایپلی کیشن کا الگورتھم ایسا مواد لاگو کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔

مذکورہ ہدایات گزشتہ ماہ ٹک ٹاک کی جانب سے جاری کی گئی تھیں جس کا اطلاق تین روز قبل 17 مئی سے ہوگیا ہے۔ جس کے بعد ویڈیوز میں ایسا خطرناک مواد نظر نہیں آئے گا جس پر مختلف خطوں یا ممالک میں تنازعات ہوتے رہے ہیں۔اس کے علاوہ مختلف قسم کے چیلنجز کا مواد بھی نظر نہیں آئے گا۔

جاری کردہ ہدایات میں مزید کہا گیا ہے کہ وزن کم کرنے، امراض قلب میں مددگار ورزش کرنے کے طریقے بھی فار یو فیڈ پر نہیں دکھائی دیں گے اور انہیں ریکمنڈ بھی نہیں کیا جائے گا۔

ٹک ٹاک انتظامیہ نے واضح کیا کہ عریاں ویڈیوز اور تصاویر بھی نہیں دکھائی جائیں گی اور ایسے مواد کو بھی ریکمنڈ نہیں کیا جائے گا، جس میں فیشن کے نام پر صرف انڈر ویئر یا بریزیئر جسم پر موجود ہوں گے۔

نئی گائیڈ لائنز کے مطابق جوا، تاش، شراب نوشی، تمباکو نوشی اور اسی طرح کے دیگر معاملات کے مواد کو بھی نہیں دکھایا جائے گا۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں