The news is by your side.

Advertisement

ٹوکیو اولمپکس کا انعقاد ایک بار پھر کیوں خطرے میں پڑگیا؟

ٹوکیو : جاپان میں ہونے والے ٹوکیو اولمپکس اور پیرالمپکس گیمز کے منتظمین کو ملک میں کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد میں حالیہ اضافے کے باعث طبی رضاکاروں کی خدمات حاصل کرنے میں بڑھتی ہوئی مشکلات کا سامنا ہے۔

ٹوکیو آرگنائزنگ کمیٹی، گیمز کے لیے تقریباً 10 ہزار طبی کارکنان کی فراہمی کی درخواست کر رہی ہے۔ تاہم بین الاقوامی اولمپک کمیٹی کے صدر تھامس باخ کا کہنا ہے کہ ٹوکیو میں امکانی طور پر نافذ ہونے والی ہنگامی حالت کا ٹوکیو گیمز پر براہ راست اثر نہیں پڑے گا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جاپان کی آرتھوپیڈک ایسوسی ایشن نے ماہ اپریل سے 4 ہزار 784 اسپورٹس ڈاکٹرز کا سروے کیا۔ 92 جواب دہندگان کا کہنا تھا کہ وہ رضاکارانہ خدمات سرانجام دینے پر تیار ہیں۔ گیمز آرگنائزنگ کمیٹی ایسوسی ایشن سے دو سو ڈاکٹروں کی فراہمی کی درخواست کر رہی ہے۔

ایک 30 سالہ ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ غیر معمولی طبی بحران کے باوجود گیمز کو ترجیح دی جا رہی ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ اس کے لیے ہسپتال کو چھوڑنا مشکل ہے کیونکہ عملے کی مصروفیات میں دن بدن اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ حکومت جاپان کورونا وائرس کی نئی لہر پر قابو پانے کیلئے ٹوکیو اور دیگر تین دیگر شہروں میں ہنگامی حالت نافذ کرنے کا اعلان کرنے پر غور کررہی ہے۔ وہ ماہرین سے مشاورت کے بعد جمعہ کے روز باضابطہ فیصلہ کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں