The news is by your side.

Advertisement

ریلوے پھاٹک نہ ہونے سے ایک اور حادثہ، 5 افراد جاں بحق

سکھر: روہڑی کے قریب پیارو واہ کے مقام پر ریلوے پھاٹک نہ ہونے کی وجہ سے حادثے میں پانچ افراد جاں بحق ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق ریلوے پھاٹک نہ ہونے سے ایک اور حادثہ پیش آ گیا، سکھر میں روہڑی کے قریب ریلوے انجن کی زد میں آ کر موٹر سائیکل سوار دو بچوں سمیت 5 افراد کی جانیں چلی گئیں۔

حادثہ پیارو واہ کے مقام پر پھاٹک کراس کرتے وقت پیش آیا، ریسکیو ذرایع کے مطابق حادثے میں جاں بحق ہونے والوں میں دو مرد ایک خاتون اور دو بچے شامل ہیں، متوفی افراد کا تعلق ایک ہی خاندان سے ہے۔

اطلاعات کے مطابق بد قسمت خاندان والے قریبی گاؤں میں ماموں کے گھر جا رہے تھے کہ حادثہ پیش آ گیا، دوسری طرف ذرایع کا کہنا ہے کہ خالی انجن روہڑی سے میرپور ماتھیلو جا رہا تھا،حادثہ روہڑی کے قریب پیارو واہ کے مقام پر 484 کلو میٹر کے مقام پر پیش آیا۔

سندھ حکومت نے محکمہ ریلوے سے ریلوے پھاٹکوں پر گیٹ لگوانے کا مطالبہ کر دیا

واضح رہے کہ سندھ میں ریلوے لائنز پر پھاٹک نہ ہونے سے تواتر کے ساتھ حادثات پیش آ رہے ہیں، جن میں قیمتی انسانی جانیں ضایع ہو رہی ہیں، تاہم وزارت ریلوے کی جانب سے تاحال اس پر خاطر خواہ توجہ نہیں دی گئی ہے۔

گزشتہ ہفتے سندھ حکومت نے محکمہ ریلوے سے صوبے میں ایک بار ریلوے پھاٹکوں پر گیٹ لگوانے کا مطالبہ کیا تھا، صوبائی وزیر زراعت اسماعیل راہو کا کہنا تھا کہ محکمہ ریلوے کی نا اہلی کی وجہ سے پھاٹکوں پر 50 سے زائد حادثات ہو چکے ہیں، پھاٹکوں پر کئی بار گیٹ لگانے کا کہا گیا لیکن کوئی سننے کو تیار نہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں