The news is by your side.

Advertisement

25 مارچ سے ٹرین آپریشن محدود ہو جائے گا

لاہور: پاکستان ریلویز نے ٹرین آپریشن محدود کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے، محکمے کے ترجمان نے کہا ہے کہ  ٹرین آپریشن محدود کرنے پر عمل درآمد 25 مارچ سے شروع ہوگا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیر ریلوے شیخ رشید کی زیر صدارت اعلیٰ سطح اجلاس میں ٹرین آپریشن محدود کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، پہلے مرحلے میں 10 مسافر ٹرینوں کو بند کیا جائے گا، صورت حال کو مد نظر رکھتے ہوئے مزید ٹرینوں کی بندش کا فیصلہ ہوگا۔

ریلوے ترجمان کے مطابق پاکستان میں اس وقت 134 مسافر ٹرینیں چل رہی ہیں۔ محکمے کی جانب سے کراچی سے چلنے والی 8 ٹرینیں بھی منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ مکمل ٹرین آپریشن بند کرنا میرے اختیار میں نہیں ہے، اس حوالے سے وزیر اعظم فیصلہ کریں گے۔

کرونا وائرس، شیخ رشید کی صوبائی حکومتوں کو بڑی پیشکش

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ کم مسافروں والی مختلف ٹرینوں کو آپس میں یک جا کیا جاسکتا ہے، ریلوے محکمہ مسافروں اور عملے کی حفاظت کے ہر ممکن اقدامات کر رہا ہے۔

ذرایع کا کہنا تھا کہ ٹرینیں بند کرنے کا فیصلہ سندھ حکومت کی درخواست پر کیا گیا ہے، جو ٹرینیں معطل کی جا رہی ہیں ان مسافروں کے لیے متبادل انتظامات کیے جائیں گے، پاکستان ریلوے کے پاس اتنے پیسے نہیں کہ کرایہ واپس کر دیا جائے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز ریلوے انتظامیہ کراچی کی ایک اور غفلت سامنے آئی تھی، ریلوے کا عملہ ماسک اور ہینڈ سینیٹائزر کے بغیر کام کرنے پر مجبور ہے، غیر متعلقہ افراد کی بغیر چیکنگ آمد و رفت بھی عملے اور مسافروں کے لیے خطرہ بن گئی ہے، ریلوے اسٹیشنز پر مسافروں کے تحفظ کے لیے خاطر خواہ انتظامات نہیں کیے گئے۔ ذرایع کا کہنا تھا کہ ریلوے انتظامیہ نے کلرک، واشنگ لائن کے کسی اہل کار کو سہولت نہیں دی، کلرکس، ٹکٹ چیکر بغیر ماسک اور سینیٹائزر کے کام کر رہے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں