The news is by your side.

Advertisement

4 دوستوں نے ایئرپورٹ پر 30 کلو کینو کیوں کھائے؟

چین میں 4 افراد نے ایئرپورٹ پر مقررہ حد سے زائد سامان کی فیس ادا کرنے کے بجائے 30 کلو گرام کینو کھا لیے، جس کے بعد ان کے سامان کے وزن میں تو کمی ہوگئی لیکن ان کے منہ میں شدید جلن پیدا ہوگئی۔

یہ واقعہ چین کے جنوب مغربی صوبے میں پیش آیا جہاں 4 مسافر اندرون ملک سفر کر رہے تھے، دوسرے شہر جانے والے افراد میں سے ایک شخص وانگ نے گھر جانے سے قبل 30 کلو گرام کینوؤں کا باکس خرید لیا۔

تاہم ایئرپورٹ پر انہیں بتایا گیا کہ ان کے سامان کا وزن زیادہ ہے، اور انہیں فی کلو گرام 10 یان ادا کرنے ہوں گے۔

وانگ نے یہ باکس 50 یانز (12 سو 42 پاکستانی روپے) میں خریدا لیکن اگر وہ ایئر پورٹ پر اسے جہاز میں رکھنے کی قیمت ادا کرتا تو اسے 300 یانز (7 ہزار 457 پاکستانی روپے) ادا کرنے ہوتے۔

یہ رقم اس کی جیب پر نہایت بھاری پڑتی چنانچہ اس نے اور اس کے دوستوں نے وہیں باکس کھولا اور 20 سے 30 منٹ کے اندر 30 کلو گرام کینو کھا گئے۔

اتنی زیادہ مقدار میں کینو کھانے کے بعد چاروں دوستوں کے منہ میں چھالے پڑ گئے اور تکلیف شروع ہوگئی۔

ان کی کینو کھاتے ہوئے ویڈیو سوشل میڈیا پر نہایت وائرل ہوئی، ایک شخص نے کہا کہ کیا ایسا ممکن نہیں تھا کہ وہ ان کینوؤں کو 4 حصوں میں تقسیم کر لیتے اور ہر شخص ایک تھیلا بطور ہینڈ کیری طیارے میں ساتھ لے جاتا۔

خیال رہے کہ ہوائی جہازوں میں اضافی سامان لے جانے اور ان کی فیس ادا کرنے سے بچنے کے لیے لوگ مختلف ترکیبیں آزماتے دکھائی دیتے ہیں۔ اکثر افراد ساتھ لے جانے والے بہت سے کپڑے پہن کر سامان کا وزن کم کرنے کی کوشش بھی کرتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں