بھارت میں بھگوان کی ماحول دوست مورتیاں -
The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں بھگوان کی ماحول دوست مورتیاں

دنیا بھر میں جہاں مختلف اشیا کو ماحول دوست بنانے پر کام کیا جارہا ہے وہیں بھارت میں اس سلسلے میں ایک اور جدت سامنے آئی ہے۔

بھارت میں اب بھگوان کی ماحول دوست مورتیاں بھی بنائی جارہی ہیں جنہیں ٹری گنیشا کا نام دیا گیا ہے۔

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے ماحولیات کی بھارتی سفیر اور بالی ووڈ اداکارہ دیا مرزا نے ان مورتیوں کے بنانے کے عمل کا جائزہ لیا اور اسے اپنے مداحوں سے بھی شیئر کیا۔

دنیا بھر میں بھگوان کی مورتیاں عموماً پلاسٹر آف پیرس سے بنائی جاتی ہیں جو زمین میں تحلیل نہیں ہوسکتا۔ بعد ازاں ہندو روایات کے مطابق ان مورتیوں کو پانی میں ڈال دیا جاتا ہے جو پانی کی آلودگی کا سبب بنتے ہیں۔

ٹری گنیشا کا خیال پیش کرنے والا نوجوان دادتری کوتھر ایک آرٹسٹ بھی ہے۔

ان مورتیوں کو بنانے میں چکنی مٹی اور کھاد کا استعمال کیا جاتا ہے۔ بعد ازاں اسے سانچے میں ڈھال کر مورتی کی شکل دے دی جاتی ہے۔ ہندو تہوار میں اس کی پوجا کرنے کے بعد اس پر پانی ڈالا جاتا ہے جس کے بعد یہ آہستہ آہستہ گھل کر مٹی میں مل جاتا ہے۔

ساتھ ہی یہاں پر کچھ بیج بھی ڈال دیے جاتے ہیں جس کے بعد بھگوان کی جگہ پودے اگنے لگتے ہیں۔

اس کو بنانے والے آرٹسٹ نے شروع میں 500 کی تعداد میں یہ مورتیاں بنائیں، بعد ازاں اسے 4 ہزار مورتیوں کے آرڈرز موصول ہوئے۔

دادتری کا کہنا ہے کہ یہ اس کی عقیدت کا اظہار ہے کہ ایسا بھگوان بنایا جائے جو فطرت کا حصہ بن جائے اور ہم بعد میں بھی اس سے فیضیاب ہوسکیں۔

دادتری نے ابھی اپنی مورتی کو کمرشلی لانچ نہیں کیا، تاہم اس کی مورتیاں دن بدن مقبولیت حاصل کر رہی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں