The news is by your side.

Advertisement

کینیڈین وزیراعظم نے سپریم کورٹ میں مسلم جج نامزد کردیا

اوٹاوا: کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے سپریم کورٹ میں پہلے مسلم جج کو نامزد کردیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے سپریم کورٹ آف کینیڈا میں مسلم جج نامزد کردیا۔

محمود جمال یکم جولائی کو عہدے کا چارج سنبھالیں گے، محمود جمال 2019 میں اونٹاریو اپیل کورٹ میں جج کے عہدے پر فائز ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ کینیڈا کی 146 سالہ تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے جب کسی مسلم کو ملک کی عدالت عظمیٰ کا جج نامزد کیا گیا ہے۔

محمود جمال کی نامزدگی کو ابھی ایوان نمائندگان کی جسٹس کمیٹی سے توثیق کی ضرورت ہوگی تاہم اسے محض ایک رسمی خانہ پری قرار دیا جارہا ہے۔

جسٹن ٹروڈو نے لکھا کہ ’محمود جمال سپریم کورٹ کے لیے ایک قیمتی اثاثہ ثابت ہوں گے اور اسی لیے میں آج ملک کی اعلیٰ ترین عدالت کے لے ان کی تاریخی نامزدگی کا اعلان کررہا ہوں، تین کروڑ 80 لاکھ آبادی والے ایک ایسے ملک میں جہاں ہر چار میں سے ایک شخص اقلیتی فرقے سے تعلق رکھتا ہے۔

دوسری جانب کینیڈا کی رکن پارلیمان جولی ڈیزیزوز نے کہا کہ ایک ماہر قانون دان کے طور پر محمود جمال کا کیریئر شاندار رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں