The news is by your side.

Advertisement

پاکستان اور بھارت ایٹمی طاقتیں ہیں، تنازعے کا حل ضروری ہے: ٹرمپ

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر ثالثی کی پشکش کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت ایٹمی طاقتیں ہیں، تنازعے کا حل ضروری ہے۔

اپنے ایک بیان میں امریکی صدر ڈنلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے وزرائے اعظم کے ساتھ ملاقات مثبت رہی، دونوں ممالک ایٹمی طاقتیں ہیں، معاملات ٹھیک کرنا ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان اور مودی سے ملاقاتوں میں کشمیر پر بات کی، ثالثی سمیت ہر ممکن مدد کے لیے تیار ہوں، تنازعے کا حل ضروری ہے۔

ٹرمپ کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کو مل کر مسئلے کا حل نکالنا چاہیئے، کشیدگی کے خاتمے کے لیے ہر ممکن مدد کرسکتا ہوں۔

خیال رہے کہ اس سے قبل بھی امریکی صدر متعدد بار پاک بھارت کو مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالثی کی پیش کش کرچکے ہیں، لیکن بھارت اسے دوطرفہ مسئلہ قرار دے کر مذاکرات سے راہ فرار اختیار کرلیتا ہے۔

بھارت مسئلہ کشمیر کو دوطرفہ کہہ کر امریکا اور عالمی برادری سے فریب کررہا ہے، شاہ محمود

گذشتہ روز وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر کو مسئلہ کشمیر سے آگاہ کیا جس پر امریکی صدر نے کہا ساری باتیں مودی سے کروں گا، ٹرمپ نے مودی سے ساری باتیں بھی کیں لیکن مودی نے امریکی صدر کو کہا کہ یہ ہمارا آپس کا معاملہ ہے۔

شاہ محمودقریشی نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے واضح طور پر کہا کہ کشمیر کا مسئلہ دوطرفہ نہیں ہے، بھارت دوطرفہ کہہ کر امریکا کو دھوکا اور عالمی برادری سے فریب کررہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں