The news is by your side.

Advertisement

امریکی صدر کا میکسیکو کے ساتھ آزاد تجارتی معاہدہ ختم کرنے کا عندیہ

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے میکسیکو کے ساتھ آزاد تجارتی معاہدہ ختم کرنے کا عندیہ دے دیا۔

ان خیالات کا انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کیا، ٹرمپ نے کہا کہ لوگ قافلوں کی صورت میں امریکا میں داخل ہورہے ہیں، ری پبلی کن ارکان امیگریشن کے لیے قوانین سخت کرنے ہوں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے ڈاکا پروگرام پر کسی بھی ڈیل سے انکار کردیا، ڈاکا پروگرام پر فیصلے کے لیے صدر ٹرمپ نے کانگریس کو چھ ماہ کا وقت دے رکھا ہے۔

امریکی صدر نے کہا کہ امیگرنٹس کا ڈاکا معاہدہ اب نہیں رہے گا، میکسیکو کے ساتھ امریکی سرحد خطرناک ہوتی جارہی ہے، احمق لبرل قوانین کی وجہ سے بارڈر پیٹرول ایجنٹ کام نہیں کرپارہے ہیں۔

واضح رہے کہ ڈاکا پروگرام سابق امریکی صدر اوباما کے دور میں 2012 میں وضح کیا گیا تھا اور موجودہ صدر ٹرمپ نے گزشتہ موسم خزاں میں اسے منسوخ کرنے کی کوشش کی تھی۔

یہ قانون ان لوگوں کے بارے میں تھا جو اپنے بچپن میں والدین کے ساتھ امریکا آئے تھے اور ان کے والدین کے پاس قانونی دستاویزات نہیں تھیں، اس قانون کے تحت وہ ڈی پورٹ ہونے سے بچتے رہے اور کام کرنے کا اجازت نامہ ملتا رہا۔

صدر ٹرمپ نے ڈیموکریٹ ارکان کانگریس کو یہ پیشکش کی تھی کہ وہ ڈاکا پر کوئی معاہدہ کرنے پر غور کرسکتے ہیں، بشرطیکہ جواب میں ڈیموکریٹک ارکان میکسیکو کے ساتھ سرحد پر دیوار تعمیر کرنے کے لیے فنڈز منظور کرنے میں پبلکنز کا ساتھ دیں۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ان دونوں ایسٹر تہوار منانے کے لیے ان دنوں پام بیچ فلوریڈا میں اپنے ریزارٹ پر چھٹیاں گزار رہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں