The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ نے 3 دن بعد ڈبلیو ایچ او سے متعلق بڑا یو ٹرن لے لیا

واشنگٹن: امریکی صدر سے تین دن سے زیادہ انتظار نہ ہو سکا، عالمی ادارہ صحت کے حوالے سے انھوں نے اپنے بیان سے یو ٹرن لے لیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل کو خط لکھ کر ایک بار پھر فنڈنگ ختم کرنے کی دھمکی دے دی ہے، جب کہ محض تین دن قبل انھوں نے ڈبلیو ایچ او کی فنڈنگ بحال کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

ٹرمپ نے اپنے خط میں کہا کہ 30 روز میں اصلاحات کا عہد نہ کیا تو امریکا رکنیت ختم کرنے پر بھی غور کرے گا، وبائی امراض پر آپ کے ادارے کی غلطیاں دنیا کو مہنگی پڑی ہیں، ڈبلیو ایچ او کے پاس صرف ایک راستہ ہے اور وہ ہے چین سے آزادی۔

انھوں نے ادارے کے ڈی جی لکھا کہ میری انتظامیہ اصلاحات کے لیے آپ سے بات چیت کر رہی ہے، معاملات پر جلد کارروائی کی ضرورت ہے، وقت ضائع نہ کریں۔

ٹرمپ نے ڈبلیو ایچ او کے سلسلے میں بڑا اعلان کر دیا

دریں اثنا، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر عالمی ادارے کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ڈبلیو ایچ او چین کی کٹھ پتلی ہے، عالمی ادارے کی تمام توجہ چین کو اچھا دکھانے پر ہے، جب کہ ادارے نے امریکا کو برے مشورے دیے، اس لیے فنڈز کم یا ختم کرنے پر غور کر رہے ہیں۔

16 مئی کو امریکی میڈیا نے کہا تھا کہ امریکا ڈبلیو ایچ او کو اتنی ہی فنڈنگ دے گا جتنی چین عالمی ادارے کو فراہم کرے گا، ٹرمپ نے اس اعلان کے ساتھ یہ امید بھی ظاہر کی کہ موجودہ بحران کے دوران عالمی ادارہ صحت تعمیری کردار ادا کرے گا۔

دوسری طرف گزشتہ روز جنیوا میں کو وِڈ 19 کے خلاف یو این رسپانس ہیلتھ اسمبلی کے دو روزہ اجلاس میں چینی صدر نے کرونا ریسرچ کے لیے 2 بلین ڈالرز کا اعلان کر دیا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں