site
stats
اہم ترین

امریکہ: سفری پابندی کے صدارتی حکم کی معطلی کا فیصلہ برقرار

واشنگٹن : امریکی اپیل کورٹ نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی نئی سفری پابندیوں کے خلاف فیصلہ سناتے ہوئےمعطلی کو برقرار رکھاہے۔

تفصیلات کےمطابق امریکی وفاقی عدالت نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے چھ مسلم ممالک کے افراد پر سفری پابندی کے ترمیم شدہ حکم نامے کی معطلی کے فیصلے کو برقرار رکھا ہے۔

خیال رہےکہ سان فرانسسکو میں دی نائنتھ یو ایس سرکٹ کورٹ آف اپیلز مارچ میں ہوائی کے وفاقی جج کی جانب سے اس حکم نامے کے کچھ حصوں پر پابندی لگانے کے فیصلے کے خلاف سماعت کررہی تھی۔

ججوں کا کہنا ہے کہ حکومت کو امریکہ میں داخل ہونے والے افراد کی جانچ کے طریقہ کار کا ازسرنو جائزہ لینا کی اجازت ہے۔


کچھ خطرناک ممالک پرسفری پابندیاں لگانا ضروری ہے ،ٹرمپ


یاد رہےکہ اس سے قبل رواں ماہ ہی وائٹ ہاؤس نے امریکی سپریم کورٹ سے کہا تھا کہ وہ صدر ٹرمپ کے مسلمان ملکوں پر عائد سفری پابندیوں کے قانون کو بحال کر دے۔

ٹرمپ انتظامیہ نے سپریم کورٹ کے نو ججوں سے دو ہنگامی درخواستیں عائد کر کے اپیل کی تھی کہ نچلی عدالتوں کے فیصلے کو منسوخ کیا جا سکے۔

واضح رہےکہ صدر ٹرمپ کے اس حکم نامے کے تحت جن ممالک کے افراد پر 90 روز کی سفری پابندی عائد کی جانی تھی ان میں ایران، لیبیا، صومالیہ، سوڈان اور یمن شامل ہیں۔ اس حکم نامے کے تحت پناہ گزینوں پر بھی 120 روزہ پابندی عائد کرنے کا کہا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top