The news is by your side.

Advertisement

کشمیرمیں فوجی مظالم روکنے کے لیے دباو ڈالا جائے گا، ترک وزیراعظم

استنبول: ترکی کے وزیر اعظم بن علی یلدرم نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم انسانیت سوز ہیں جس کے خلاف جلد ترک اسمبلی میں مذمتی قرارداد منظور کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم میاں محمد نوازشریف کی جانب سے کشمیر کے حوالے سے بنائے گئے خصوصی وفد نے استنبول میں ترکی کے وزیراعظم سے ملاقات کی اور مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کی جانب سے کیے گئے مظالم کے شواہد پیش کیے۔

وزیر اعظم کی جانب سے بھیجے گئے خصوصی وفد نے ترک وزیر اعظم کو مقبوضہ کشمیر پر خصوصی بریفنگ کے علاوہ ڈوزیئر اور تصاویری شواہد اور مقبوضہ وادی میں ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے حوالے سے بھی آگاہ کیا۔

پڑھیں:  پاکستان سے مسئلہ کشمیر پر ترکی کا اظہار یکجتی

 اس موقع پر ترکی وزیر اعظم نے کہا کہ ’’بھارتی مظالم انسانیت سوز اور قابلِ مذمت ہیں تاہم آئندہ ماہ ترک اسمبلی میں اس کے خلاف قرارداد منظور کی جائے گی اور او آئی سی کے ذریعے بھارت پر دباؤ ڈالا جائے گا‘‘۔

انہوں نے پاکستانی وفد کو یقین دہانی کروائی کہ ترک صدر نے او آئی سی کے اجلاس میں کشمیر کے مسئلے پر بات کرنے کے احکامات دیے ہیں، ترک وزیر اعظم نے بھارتی افواج کے مظالم پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار بھی کیا۔

مزید پڑھیں:  کشمیری بچہ بھارتی فوج کے سامنے سینہ تان کر کھڑا ہوگیا، فلک شگاف نعرے

قبل ازیں پاکستانی وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف نے بھی علی بن یلدرام سے ملاقات کی اور لائن آف کنٹرول پر جاری بھارتی کشیدگی کے حوالے سے آگاہ کرتے ہوئے ترکی کی جانب سے پاکستان کی حمایت پر اُن کا شکریہ بھی ادا کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں