site
stats
عالمی خبریں

انقرہ : ترکی میں تین مہنیے کے لیے ایمرجنسی نافذ

انقرہ : ترک حکومت کے خلاف بغاوت کی ناکام کوشش کے بعد صدر رجب طیب اردوغان نے ملک میں تین ماہ کے لیے ہنگامی حالت نافذ کر دی ہے.

تفصیلات کے مطابق صدر اردوغان نے اس بات کا اعلان انقرہ میں ایک اجلاس کے دوران کیاانہوں نے کہا کہ اس سے حکام کو بغاوت کے ذمہ داروں کے خلاف تیزی سے کارروائی کرنے میں آسانی ہو گی.

ہنگامی حالت کے نفاذ کے بعد صدر اردوغان کو پارلیمان کو بائی پاس کرنےاور بعض شہری حقوق معطل کرنے کا اختیار مل جائے گا، تاہم انہوں نے وعدہ کیا ہے کہ وہ ترک شہریوں کے بنیادی حقوق کا تحفظ کریں گے.

ترک صدر نے صدارتی محل میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ’مسلح افواج سے تمام وائرس صاف کر دیے جائیں گے۔‘

انھوں نے کہا کہ ’ ایمرجنسی کے نفاذ کا مقصد اس خطرے کو جلد از جلد ختم کرنا ہے،‘ انہوں نے مزید کہا کہ اس سے جمہوریت، قانون کی سربلندی اور آزادی کی اقدار مضبوط ہوں گی۔‘

صدر نے کہا کہ جن لوگوں کی جانیں ناکام بغاوت میں ضائع ہوئیں،ملک ان کی قربانیوں کو کبھی فراموش نہیں کرے گا.

ترک صدر نے کہا کہ دوسرے ملکوں کو ترکی کے معاملات سے پرے رہنا چاہیے،’اس ملک کو اپنی تقدیر کا فیصلہ خود کرنے کا حق حاصل ہے۔‘

یاد رہے کہ ناکام بغاوت کے بعد ہزاروں فوجیوں اور سکیورٹی اہلکاروں کو گرفتار کر لیا گیا تھا.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top