The news is by your side.

Advertisement

حکومت جانے سے 6 دن پہلے وفاقی ملازمین کے لیے 3 ماہ کی اضافی تنخواہ کا اعلان

اسلام آباد: وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے حکومت جانے سے 6 دن پہلے وفاقی ملازمین کے لیے 3 ماہ کی اضافی تنخواہ کا اعلان کردیا، نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے وفاقی ملازمین کے لیے 3 تنخواہوں کے بونس کا اعلان کیا گیا ہے، تمام وفاقی ملازمین کے لیے 3 تنخواہوں کا اعلان خصوصی کارکردگی کے نام پر کیا گیا جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

بونس کا نوٹیفکیشن وزیر اعظم کے پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد نے جاری کیا، بونس بنیادی تنخواہ کے مساوی ہوگا، نوٹیفکیشن کے مطابق بونس کا اطلاق صرف وفاق کے سرکاری ملازمین پر ہوگا۔

حکومت کی جانب سے سیاسی چال چلی گئی ہے، شاہ محمود قریشی

بونس کے اعلان پر ردعمل دیتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت کی جانب سے سیاسی چال چلی گئی ہے، لوگوں کو اپنی طرف مائل کرنے کے لیے لالی پاپ دیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کو بتانا پڑے گا کیا یہ رقم بجٹ میں رکھی گئی تھی، سیاسی طریقے سے وفاقی ملازمین میں تنخواہیں تقسیم کی جارہی ہیں، الیکشن کمیشن کو حکومت کی سیاسی چال کا نوٹس لینا چاہئے، لوگ مستحق ہیں تو تنخواہوں میں اضافے پر ہمیں اعتراض نہیں ہے۔

کس قانون کے مطابق ایسے تنخواہیں دی جارہی ہیں، شیری رحمان

پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما اور سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ کس قانون اور ضابطے کے مطابق ایسے تنخواہیں دی جارہی ہیں، ذہن سے بالا ہے کون سے قانون میں میں ایسے اعزازیے لکھے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو اس قسم کے نوٹیفکیشن کا جواب دینا ہوگا، امید اہے الیکشن کمیشن حکومت کے اقدام کا نوٹس لے گا، ویسے بھی قومی خزانہ خالی ہے اوپر سے اور بوجھ ڈالا جارہا ہے، کس کی ہدایت پر اس قسم کے نوٹیفکیشن جاری کرائے جارہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں