The news is by your side.

Advertisement

اسرائیل کے لیے جاسوسی کا الزام، ایران میں دو شہریوں کو سزا

تہران: اسرائیل کے لیے جاسوسی کے الزام میں ایرانی عدالت نے دو شہریوں کو بارہ بارہ سال کی سزا سنا دی۔

تفصیلات کے مطابق ایران میں ایک مرد اور ایک خاتون کو اسرائیل کے لیے جاسوسی کے الزام میں بارہ بارہ سال کی عمرقید کی سزا سنائی گئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی عدالت میں ثابت ہوا ہے کہ ان دونوں کے اسرائیلی خفیہ ادارے موساد کے ساتھ رابطے تھے۔

دونوں جاسوس کو اسرائیل کی جانب سے فنڈنگ ہوتی تھی، اور رقوم کی ترسیل کے لیے غیرقانونی راستہ اپنایا جاتا تھا، سزا پانے والی خاتون ایران اور برطانیہ دونوں کی دوہری شہری رکھتی ہیں۔

ایران میں آج کل دوہری شہریت رکھنے والے کئی افراد زیر حراست ہیںم ان میں سے ایک نازنین زاغری رَیٹکلِف بھی ہیں، جو 2016ء سے قید ہیں۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال اپریل میں لائبیریا سے تعلق رکھنے والے شہری کو الجزائر نے اسرائیل کے لیے جاسوسی کرنے کے جرم میں سزائے موت دی گئی تھی۔

الجزائر میں اسرائیلی جاسوس کو سزائے موت کا حکم

واضح رہے کہ الجزائر کے حکام نے جنوری 2017 میں اسرائیل کے لیے جاسوسی نیٹ ورک چلانے والے دس افراد کو گرفتار کرکے جاسوسی نیٹ توڑ دیا تھا جو جدید ترین ابلاغی اور بصری آلات کے ذریعے الجزائر کی سیکورٹی فورسز کی جاسوسی کررہا تھا۔

حالیہ برسوں میں افریقی ممالک میں متعدد افراد کو اسرائیل کے لیے جاسوسی کرنے پر قید کیا گیا ہے۔ 2016 کے اختتام پر تیونس میں ڈرونز بنانے والے ایک ایوی ایشن انجینئر کو غیر ملکیوں نے قتل کردیا تھا جس کے بارے میں کہا جارہا تھا کہ یہ موساد کی کارروائی ہے کیوں کہ مقتول کا تعلق حماس سے تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں