site
stats
عالمی خبریں

فلسطین تنازعہ، علیحدہ ریاستوں کی صورت میں‌ حل ہوگا، امن کانفرنس اعلامیہ

پیرس: اسرائیل اور فلسطین کے درمیان مذاکرات کی بحالی کے لیے امن کانفرنس کا انعقاد کیا گیا، کانفرنس میں شرکت کرنے والے رکن ممالک نے اس بات پر زور دیا کہ اسرائیل اور فلسطین کے درمیان جاری تنازعہ علیحدہ ریاستوں کے ذریعے ہی حل ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیل، فلسطین مذاکرات بحالی کے لیے مشرق وسطیٰ امن کانفرنس کا انعقاد کیا گیا، جس میں 70 ممالک کے نمائندوں نے شرکت کی جبکہ اسرائیلی وزیر اعظم نے کانفرنس کو بے فائدہ قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کردیا۔

اس موقع پر فرانس کے وزیر خارجہ نے نومنتخب امریکی صدر کو متنبہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’ٹرمپ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت بنانے سے باز رہیں، امریکی سفارتخانے کی یروشلم منتقلی کے سنگین نتائج سامنے آئیں گے‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’ٹرمپ کے لیے امریکی سفارتخانے کی منتقلی کا وعدہ پورا کرنا آسان کام نہیں ہے‘‘۔

رکن ممالک نے اسرائیل کو فلسطین کے معاملے پر یک طرفہ کارروائی سے باز رہنے کا مشورہ بھی دیا اور واضح کیا کہ خلاف ورزی کی صورت میں تمام ممالک فلسطین کا ساتھ دینے پر مجبور ہوں گے، اسرائیلی وزیراعظم معاہدے کی پاسداری نہیں کریں گے تو معاملہ سنگین ہوسکتا ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق رکن ممالک کے اراکین نے اس بات پر بھی زور دیا کہ اسرائیل اور فلسطین یروشلم کے حوالے سے کوئی بھی اقدامات قبول نہ کریں،تاہم دونوں ممالک کے درمیان جاری تنازعہ دو ریاستوں کی صورت میں حل کیا جاسکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top