The news is by your side.

یوکرین کی فرنٹ لائن جوہری پلانٹ پر ہنگامی مشقیں، روسی گولہ باری، 7 ہلاک

کیف: یوکرین نے فرنٹ لائن پر جوہری پلانٹ کے قریب ہنگامی مشقیں کیں۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین کے حکام نے بدھ کو روس کے زیر قبضہ زپورئیژا نیوکلیئر پاور پلانٹ پر بار بار گولہ باری کے بعد پلانٹ کے قریب تباہی سے نمٹنے کی مشقیں کیں، یہ مشقیں یورپ میں اپنی نوعیت کی سب سے بڑی مشقیں ہیں۔

یوکرینی حکام نے زپورئیژا نیوکلیئر پاور پلانٹ کے قریب ایمرجنسی ڈرل کا مقصد تابکاری کی صورت میں ہنگامی حالات سے نمٹنا قرار دیا ہے۔

واضح رہے کہ دونوں فریق ایک دوسرے پر حالیہ دنوں میں جوہری تنصیب کے آس پاس ہونے والے حملوں اور ان میں ملوث ہونے کا الزام لگاتے ہیں، اور اسے "جوہری دہشت گردی” کہہ رہے ہیں۔

خارکیف، یوکرین میں رہائشی عمارت پر روسی فوجی حملہ

 

دوسری طرف اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کا کہنا ہے کہ زپورئیژا پاور پلانٹ کے ارد گرد غیر فوجی زون قائم کیا جائے۔ اس سلسلے میں وہ جمعرات کو یوکرین کے صدر ولودیمیر زیلنسکی اور ترک صدر طیب اردوان سے بھی بات چیت کے لیے ملاقات کریں گے۔

ادھر روس کی یوکرین کے شہر خارکیف کے ایک رہائشی ضلع پر گولہ باری کے نتیجے میں 7 افراد ہلاک اور 16 زخمی ہو گئے ہیں، گولہ باری سے رہائشی عمارت ملبے کا ڈھیر بن گئی۔

یوکرینی صدر ولودیمیر زیلنسکی نے بدلہ لینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یہ بغیر کسی جواز کے عام شہریوں پر ایک مکروہ اور مذموم حملہ ہے، جو روسی بے بسی کو ظاہر کرتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں