The news is by your side.

Advertisement

ویلنٹائن پر نئی زندگی کا آغاز کرنے والے جوڑے کی محبت کا افسوسناک اختتام

کییو: انٹرنیٹ پر ایک ساتھ رہنے کے لیے ہتکھڑی لگا کر اکھٹے رہنے والے جوڑے نے راہیں جدا کرنے کا اعلان کردیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق یوکرین سے تعلق رکھنے والے الیگزینڈر اور لڑکی وکٹوریہ نے رواں سال ویلنٹائنز ڈے کے موقع پر اپنی نئی زندگی کی شروعات کی تھی۔

دونوں کا دعویٰ تھا کہ وہ ایک دوسرے سے بہت زیادہ محبت کرتے ہیں اور ہمیشہ ایک ساتھ ہی رہنے کے خواہش مند ہیں۔

اپنی خواہش کو پورا کرنے کے لیے الیگزینڈر اور وکٹوریہ نے محبت کا انوکھا انداز اپنا اور اپنے ایک ہاتھ کو چین والی ہتھکڑی لگا کر خود کو ایک دوسرے کے ساتھ اکھٹا کرلیا تھا۔

دونوں نے یہ کام محبت بڑھانے کی امید سے کیا تاکہ وہ چوبیس گھنٹے ہر وقت ایک ساتھ رہیں۔ ہتھکڑی لگنے کے بعد دونوں بازار ساتھ جاتے حتیٰ کہ کھاتے پیتے اور ہر کام ایک ساتھ ہی کرتے تھے۔

رپورٹ کے مطابق 123 روز تک ہتھکڑیوں میں رہنے کے باوجود اُن کا رشتہ مضبوط نہ ہوا اور چار روز قبل دنوں نے رشتہ ختم کرنے کا اعلان کیا۔ انوکھے اندازِ محبت کی وجہ سے انہیں دنیا بھر میں پذیرائی ملی تھی یہی وجہ ہے کہ دونوں نے رشتہ ختم کرنے کا اعلان مقامی میڈیا کے سامنے کیا۔

انہوں نے تالا کاٹنے والے کو بلا کر بڑے کٹر کی مدد سے اپنے ہاتھ کھلوائے۔ لڑکے کا کہنا تھا کہ ’یہ واضح ہوچکا کہ ہم ایک دوسرے سے مطابقت نہیں رکھتے اور نہ ہی ایک دوسرے کے لیے بنے ہیں‘۔

لڑکی نے آبدیدہ ہوکر کہا کہ ’عورت کو خود کو پرتجسس رکھنا اور ذاتی طور پر شوہر سے فاصلہ برقرار رکھنا چاہیے، ہم ہروقت ساتھ تو رہتے تھے مگر  اکٹھے رہنے کی وجہ سے کچھ روز بعد الیگزینڈر کی توجہ بالکل ختم ہوگئی تھی اور وہ رشتے کو بھی ویسی اہمیت نہیں دیتا تھا‘۔

وکٹویہ نے کہا کہ ’میں چاہتی تھی کہ وہ میری کمی محسوس کرنے اور یاد رکھنے کی بات کرے مگر اتنے دنوں میں یہ ممکن نہ ہوسکا، اب ہماری زندگیوں کے راستے ہمیشہ کے لیے جدا ہیں‘۔

آخری وقت میں لڑکی کو آبدیدہ دیکھا گیا جبکہ الیکزینڈر کے چہرے پر کوئی ندامت یا پریشانی نہیں تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں