بریگزٹ پلان کو خودکش جیکٹ کہنے پر بورس جانسن پر ساتھیوں کی تنقید boris johnson
The news is by your side.

Advertisement

بریگزٹ پلان کو خودکش جیکٹ کہنے پر بورس جانسن پر ساتھیوں کی تنقید

لندن: برطانوی وزیراعظم تھریسامے کے بریگزٹ پلان کو خودکش جیکٹ کہنے پر بورس جانسن خود اپنے ہی ساتھیوں کی کڑی تنقید کا نشانہ بن گئے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کنزرویٹو پارٹی کے سینئر ارکان نے سابق وزیر خارجہ کی ان ریمارکس کی مذمت کی ہے، سینئرارکان کا کہنا ہے کہ بورس جانسن کو حساس معاملے پر بیان بازی سے گریز کرنا چاہئے۔

سابق برطانوی وزیر خارجہ بورس جانسن نے یہ بھی متنبہ کیا تھا کہ وہ کنزرویٹو پارٹی کی سالانہ کانفرنس سے قبل ہی اپنا چیکر پلان واپس لے لیں ورنہ اس کی وجہ سے پارٹی تباہ کن ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوجائے گی۔

دوسری جانب لیبر پارٹی کے سربراہ جیریمی کوربن کو اپنی پارٹی کے ناراض ارکان کے اجلاس کا سامنا کرنا ہے جہاں انہیں صیہونیت مخالف تنازعے پر پارٹی ارکان کی الزام تراشی برداشت کرنا پڑے گی۔

برطانوی وزرا نے یہ بتانے سے انکار کردیا ہے کہ انہوں نے دوبارہ ریفرنڈم کرانے کے لیے قانونی مشورہ کیا ہے جبکہ رپورٹ کے مطابق دوبارہ ریفرنڈم کرانے کے لیے کمپنیز کے مطالبے پر غور کرنے کے لیے دباؤ بڑھ گیا ہے۔

برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے ٹوری بیک بیچ کی بغاوت کے بعد 50 ارکان پارلیمنٹ کو آئندہ سال تک کے لیے معطل کرنے کے متنازع منصوبے کو ختم کردیا ہے۔

مزید پڑھیں: تھریسا مے نے برطانوی آئین کو خودکش جیکٹ پہنا دی، بورس جانسن

واضح رہے کہ برطانیہ کے سابق وزیر خارجہ بورس جانسن نے اتوار کے روز برطانوی خبر رساں ادارے میں شائع ہونے والے کالم میں تھریسا مے کے لیے نامناسب زبان استعمال کرتے ہوئے کہا تھا کہ تھریسا مے نے برطانوی آئین کو خودکش جیکٹ پہنا کر ریمورٹ برسلز کے ہاتھ میں تھما دیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں