site
stats
سندھ

مریض کونہلا کرلاؤ، ڈاکٹر کی شرط نے نوجوان کی جان لے لی

عمر کوٹ : ڈاکٹر کی نرالی منطق سے مریض جان کی بازی ہار گیا، ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ پہلے مریض کو نہلا کر لاؤ پھر علاج کروں گا۔پولیس نے ڈاکٹر کو گرفتار کرلیا۔ 

تفصیلات کے مطابق عمر کوٹ میں ڈاکٹر کی انوکھی شرط نے غریب خاکروب کی جان لے لی۔ بے حس ڈاکٹر کو گرفتارکر کےمقدمہ درج کرلیا گیا۔

مذکورہ خاکروب کام کے دوران گہرے گٹر میں گر گیا تھا، گٹر کی گیس اور گندہ پانی منہ میں جانے کے باعث اس کی حالت غیر ہوگئی۔

خاکروب کو بہت مشکل سے گٹر سے نکالنے کے بعد اس کے اہل خانہ اسپتال لے کر گئے تو ڈاکٹر نے مریض کی حالت دیکھ کر ہاتھ لگانے سے منع کردیا اور انوکھی شرط عائد کی کہ اس کو نہلا کر لاؤ پھر علاج ہوگا۔

جس پر خاکروب کے اہل خانہ نے ڈاکٹر سے شدید احتجاج کرتے ہوئے اس کے علاج پر زور دیا۔ اس دوران بروقت طبی امداد نہ ملنے پرخاکروب نے تڑپ تڑپ کر جان دیدی۔

مریض کی جان بچانے کیلئے ڈاکٹر کا روزہ توڑنا بھی جائز ہے، مفتی نعیم


اس حوالے سے مفتی محمد نعیم کا کہنا ہے کہ کسی کی جان سے بڑھ کر کوئی دوسری چیز نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مریض کی جان بچانے کیلئے ڈاکٹر روزہ بھی توڑسکتا ہے۔

مفتی نعیم نے کہا کہ یہ انتہائی غلط بات اور قابل مذمت ہے کہ ڈاکٹر نے محض اس لیے مریض کا علاج نہیں کیا کہ وہ گندی حالت میں تھا، انہوں نے کہا کہ مریض کی ہلاکت کا سو فیصد ذمہ دار وہ ڈاکٹر ہے۔

 

اسے ہر حالت میں سزا ملنی چاہیئے، اگر مریض کی جان بچانے کیلئے ڈاکٹر کو روزہ توڑنا بھی پڑتا تو کوئی حرج نہیں.

واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے ایس ایس پی عمر کوٹ کو کارروائی کی ہدایت کردی۔ پولیس نے ڈاکٹر جام کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کر لیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top