The news is by your side.

Advertisement

انتونیو گوتریس سے ملیے

‘‘قیامِ امن کی کوششوں کے لیے پاکستان دنیا بھر میں سب سے زیادہ قابلِ بھروسا اور مستقل کردار ادا کرنے والے ممالک میں سے ایک ہے۔’’

یہ الفاظ ہیں انتونیو گوتریس کے، جو اقوامِ متحدہ کےنویں جنرل سیکرٹری ہیں۔

انتونیو پاکستان کے دورے پر ہیں اور یہاں آمد سے قبل انھوں نے اپنے ٹویٹر اکائونٹ پرپاکستان کی قیامِ امن کے لیے کوششوں اور کردار کو سراہا۔

آئیے ، انتونیو گوتریس کی زندگی کے سفر پر ایک نظر ڈالتے ہیں۔

ان کا وطن پرتگال ہے۔

اونتونیو گوتریس 30، اپریل 1949 کو لزبن شہر میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم مکمل کرنے کے بعد انجینئرنگ کے شعبے کا چنائو کیا اورتدریس سے وابستہ ہو گئے۔

سیاست میں قدم رکھنے سے پہلے وہ اسسٹنٹ پروفیسر کی حیثیت سے تدریس میں‌ مصروف تھے۔

1974 میں انھوں نے سوشلسٹ پارٹی سے وابستگی اختیار کی اور سیاسی سفر کا آغاز کیا۔

انتخابات میں پارٹی کی فتح کے بعد وہ پرتگال کے وزیرِ اعظم منتخب ہوئے۔

2005 سے 2015 تک اقوامِ متحدہ میں پناہ گزینوں کے ہائی کمشنر کا عہدہ ان کے پاس رہا۔

متعدد تنظیموں سے وابستگی اوران کے پلیٹ فارم سے تعمیری و فلاحی سرگرمیاں انجام دینے کے ساتھ 2016 میں اقوامِ متحدہ کے جنرل سیکرٹری کے عہدے کا حلف اٹھایا۔

اقوامِ متحدہ کے جنرل سیکرٹری لاہور کی تاریخی بادشاہی مسجد اور شاہی قلعے کی سیر کا بھی ارادہ رکھتے ہیں۔انھوں نے پاکستان میں پولیو جیسے مرض کے خاتمے کے لیے بھی امید ظاہر کی ہے ۔ وہ ایک اسکول میں بچوں کو پولیو سے بچاؤ کی ویکسین پلائیں گے۔

انتونیو گوتریس کرتار پور میں گردوارا صاحب بھی جائیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں