جامعہ کراچی میں کلرک رشوت طلب کرتے ہوئے پکڑا گیا -
The news is by your side.

Advertisement

جامعہ کراچی میں کلرک رشوت طلب کرتے ہوئے پکڑا گیا

کراچی : جامعہ کراچی کے کلرک کی رشوت وصولی کی ویڈیو منظرعام پرآگئی، مذکورہ کلرک بلا جھجک فارم جمع کرنے کے سو روپے وصول کر رہا تھا، جامعہ کراچی کے وائس چانسلر نے نوٹس لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی یونی ورسٹی میں رشوت کا بازار گرم ہونے کا انکشاف ہوا ہے، جامعہ کراچی کے شعبہ بین الاقوامی تعلقات کے کلرک فارم جمع کرنے کے لیےطلباء سے رشوت لیتے ہیں، کلرکوں نے فی طالب علم 100روپے ریٹ مقرر کر رکھا ہے۔

ایک طالبہ نے ہمت کرکے رشوت خور کلرک کی فوٹیج بنالی، کلرک کی رشوت مانگتے ہوئے ویڈیو منظرعام پرآگئی، سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے کے بعد جامعہ کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمداجمل خان نے نوٹس لے لیا، انہوں نے انتظامیہ کو واقعے کی تحقیقات کرکے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

اس حوالے سے لائبریری انچارج نے وائس چانسلر کو بریفنگ دی کہ کلیئرنس سے پہلے واجبات دینا ہوتے ہیں، ترجمان جامعہ کراچی کا کہنا ہے کہ طالبہ پر سیمینار لائبریری کے واجبات تھے، خبرمیں تصویر کا صرف ایک رخ پیش کیا گیا ہے۔

دوسری جانب اے آر وائی نیوز کو ملنے والی فوٹیج میں دکھایا گیا ہے کہ ایک طالبہ نے سو روپے دینے سے انکار کیا تو کلرک نے دستخط کرنے سے صاف منع کردیا، طلباء نے کئی بار جامعہ کراچی میں رشوت خوروں کے خلاف شکایات درج کروائی مگر تاحال کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔

 اس حوالے سے جامعہ کراچی کے رجسٹرارمعظم علی کا کہنا ہے کہ رشوت کا واقعہ محمود الحسن لائبریری میں پیش آیا جس کی رپورٹ مانگ لی گئی ہے اور رشوت ستانی میں ملوث کلرک کے خلاف سخت ایکشن ہوگا۔ ذرائع کے مطابق رشوت لیتے ہوئے اس کلرک کا تعلق شعبہ بین الاقوامی تعلقات عامہ سے بتایا جاتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں