The news is by your side.

سعودی عرب میں مقیم افراد اپنے اہل خانہ کے لیے عمرہ ویزا جاری کروا سکتے ہیں؟

ریاض: سعودی وزارت حج و عمرہ نے اس بات کی وضاحت کی ہے کہ آیا مملکت میں مقیم افراد اپنے اہل خانہ کو عمرہ ویزے پر بلا سکتے ہیں یا نہیں۔

اردو نیوز کے مطابق سعودی حکومت کے وژن 2030 کا ایک اہم ہدف عمرے کے لیے آنے والے زیادہ سے زیادہ افراد کے لیے سہولت فراہم کرنا ہے۔

سعودی وزارت حج نے اس سلسلے میں ڈیجیٹل عمرہ سروسز کا آغاز کیا ہے جس کے ذریعے سعودی عرب سے آنے والےعمرہ زائرین کے لیے ہوٹل کی بکنگ، ٹرانسپورٹ اور دیگر خدمات کا آن لائن حصول ممکن ہوگیا ہے۔

ایک شخص نے عمرہ ویزے کےحوالے سے دریافت کیا کہ مملکت میں اقامے پر مقیم غیر ملکی اپنے اہل خانہ کے لیے عمرہ ویزا جاری کروا سکتے ہیں؟

عمرہ ویزا کے حوالے سے وزارت حج و عمرہ نے اس بات کی وضاحت کی اور کہا کہ عمرہ ضیافہ پروگرام جاری نہیں کیا جا رہا۔

عمرہ ضیافہ پروگرام کا منصوبہ 2 برس قبل مرتب کیا گیا تھا جس پر کرونا وائرس کی وجہ سے عمل درآمد نہیں ہوسکا بعد ازاں اس منصوبے کو روک دیا گیا۔

خیال رہے کہ عمرہ ضیافہ یعنی میزبان عمرہ ویزا وزارت حج و عمرہ کا منصوبہ تھا، اس پروگرام کے تحت مملکت میں رہنے والے غیر ملکیوں کو بھی اس بات کی اجازت دی جانی تھی کہ وہ اپنی ذمہ داری پر بیرون مملکت سے عمرہ ویزے پر رشتہ داروں کو بلا سکتے تھے۔

مجوزہ عمرہ پروگرام کے تحت مملکت آنے والے افراد کو اسپانسرکرنے والوں کی یہ ذمہ داری ہونی تھی کہ وہ ان کے قیام و طعام اور نقل و حمل کی جملہ سہولتیں فراہم کریں گے۔

علاوہ ازیں مقررہ وقت پر ان کی واپسی کو بھی یقینی بنائیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں