The news is by your side.

Advertisement

عرس بابا فرید گنج شکر،جنتی دروازہ کھل گیا

پاک پتن: چشتیہ سلسلے کے معروف بزرگ حضرت با با فرید الدین مسعود گنج شکرؒ کے 774 ویں عرس مبارک پر بعد نماز عشاء سجادہ نشین دیوان مودود مسعود چشتی فاروقی نے ولی عہد سجادہ نشین دیوان احمد مسعود چشتی کے ہمراہ بہشتی دروازہ کی قفل کشائی کی۔


آفتاب ولایت بابا فرید الدین مسعود گنج شکر کی زندگی پر ایک نظر


تفصیلات کے مطابق ہر سال کی طرح اس سال بھی چشتیہ سلسلے کے معروف بزرگ حضرت بابا فرید الدین مسعود گنج شکرؒ کے مزار مبارک کے جنتی دروازے کی قفل کشائی آج بعد نماز عشاء سجادہ نشین دیوان مودود مسعود چشتی فاروقی نے ولی عہد سجادہ نشین دیوان احمد مسعود چشتی کے ہمراہ کی۔

دروازہ کھولنے کے بعد سجادہ نشین اور ولی عہد نے مزار شریف پر دعا کی اور شکر، کوڑیاں سمیت منتی کلاوے اور دیگر تبرکات تقسیم کیے۔

دروزے سے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان بھی گزرے۔

اے آر وائی ڈیجیٹل نیٹ ورک کے تحت کیو ٹی وی پر دروازہ کھلنے کی براہ راست نشریات دی گئیں۔تقریب میں کیو ٹی وی کے میزبان صاحب زادہ تسلیم احمد صابری نےجنتی دروازے کی تاریخ بیان کی جب کہ کیو ٹی وی کے مفتی سہیل رضا امجدی نے جنتی دروازے کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔

مزار شریف کی پُرنور فضا نعرہ تکبیر اللہ اکبر اور حق فرید ؒ یا فریدؒ کے نعروں سے معطر رہی اور زائرین مزار شریف میں اپنی حاجات کے حصول کے لیے دعائیں کیں ،کہیں فاتحہ خوانی ہوئی تو کہیں قبر نوار پر چادر چڑھائی گئیں۔

اس موقع پرسجادہ نشین کی جانب سے ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لیے خصوصی دعائیں بھی مانگی گئیں، بہشتی دروازہ مسلسل 5 راتوں تک کھلا رہے گا جس سے عقیدت مند گزریں گے۔

اندازہ ہے کہ اس سال پہلی رات کو تقریباً دو لاکھ کے قریب زائرین بہشتی دروازے سے گزرنے کی سعادت حاصل کریں گے اس حوالے سے ڈی پی او پاکپتن نے بتایا ہے کہ عرس بابا فرید ؒ پر آنے والے زائرین کی سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کیے گئے ہیں۔

بہشتی دروازے کی قفل کشائی کی تقریب میں پیر سید طاہر نظامی، پیر سید ناظم علی نظامی آستانہ عالیہ خواجہ نظام الدین اولیاءؒ (بھارت)، پیر بلال احمد چشتی آستانہ عالیہ اجمیر شریف (بھارت)، پیر سید معین الحق، پیر احسام الدین آستانہ عالیہ گولڑہ شریف اور سید عبدالمصطفے حسن چشتی سجادہ نشین چشتیاں کامونکی سمیت ممتاز صاحبان طریقت اور شریعت اور دنیا بھر سے آئے ہوئے زائرین شرکت کے لیے پہنچ چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں