The news is by your side.

Advertisement

امریکی سرحد پر250 کی گنجائش کے حراستی مرکز میں 4 ہزار افراد موجود

میکسیکو : حالیہ ہفتوں میں مختلف ممالک سے غیر قانونی طور پر امریکہ آنے والے ہزاروں افراد اپنے بچوں کے ساتھ میکسیکو کی سرحد پر پہنچے جنہیں حراستی مراکز میں رکھا گیا ہے۔

میکسیکو کی سرحد پر قائم اس ڈٹینشن سینٹر کی حالت نہایت خستہ اور یہاں بنیادی سہولیات بھی میسر نہیں جس کے باعث نئے امریکی صدر جوبائیڈن پر دباؤ بڑھتا جارہا ہے۔

گزشتہ روز صحافیوں کے ایک گروپ نے امریکہ میں واقع ایک ڈٹینشن سینٹر کا دورہ کیا، جب بائیڈن انتظامیہ نے پہلی بار مرکزی سرحدی حراستی سہولت کے اندر صحافیوں کو جانے کی اجازت دی۔

صحافیوں نے وہاں دیکھا کہ کیمپ میں چار ہزار سے زائد لوگوں کو ایک خیمے میں رکھا گیا ہے، اس میں بچوں کے لئے الگ خانہ بنایا گیا ہے اور سونے کے لئے زمین میں میٹ بچھائی گئی ہے۔

یاد رہے کہ حالیہ ہفتوں میں ہزاروں خاندان اپنے بچوں کے ساتھ امریکہ کے میکسیکو کی سرحد پر پہنچے ہیں۔ امریکی صدر جو بائیڈن پر دباؤ رہا ہے کہ وہ ڈٹینشن سینٹر میں شفافیت لائیں۔

ایسے میں امریکی کسٹم اور بارڈر پروٹیکشن نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے دو صحافیوں اور سی بی ایس کے ایک نمائندہ کو ٹیکساس کے ڈوننا میں واقع ڈٹینشن سہولت کا دورہ کرنے کی اجازت دی۔

اس ڈٹینشن سینٹر میں41 سو افراد کو رکھا گیا ہے جبکہ اس کی گنجائش محض250 افراد کی ہی ہے، زیادہ تر بچوں کو پہلے خیموں میں رکھا جاتا ہے پھر کارروائی پوری ہونے کے بعد انہیں محکمہ صحت اور انسانی خدمات کے زیر اتنظام پناہ گاہوں میں ان کے کنبے یا رشتے دار کے ساتھ رکھا جاتا ہے۔

خیمے میں الگ الگ خانے بنائے گئے ہیں۔ بچوں کے لئے آٹھ حصے مختص ہیں اور ہر کا سائز 3200 مربع فٹ یعنی297 مربع میٹر ہے اور اس طرح ایک حصے میں500 سے زائد بچے رکھے گئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں