The news is by your side.

Advertisement

ایران ہمسایوں کو دھمکانے کے لیے شام کا استعمال بند کرے: امریکا

واشنگٹن: امریکا کے خصوصی ایلچی برائے شام اور ڈپٹی اسسٹنٹ سیکریٹری آف اسٹیٹ جوئیل رے برن کا کہنا ہے کہ ایران ہمسایوں کو دھمکانے کے لیے شام کا استعمال بند کرے۔

تفصیلات کے مطابق اپنے ایک بیان میں جوئیل رے برن کا کہنا تھا کہ پوری عالمی برادری ایران کے شام کو علاقائی ممالک کو ڈرانے دھمکانے کے لیے استعمال کرنے کے خلاف ہے۔

انہوں نے کہا کہ یورپی یونین اور عرب دنیا کے درمیان ایران پر دبا ڈالنے کے معاملے میں اتفاق رائے پایا جاتا ہے تاکہ اس کو شام کو علاقائی ممالک کو ڈرانے دھمکانے کے لیے استعمال کرنے سے روکا جاسکے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس معاملے میں ایرانی رجیم بالکل تنہا ہے، پوری عالمی برادری ایران کے شام کو علاقائی ممالک کو ڈرانے دھمکانے کے لیے استعمال کرنے کے خلاف ہے اور اس کے اس کردار کو مسترد کرتی ہے، عرب دنیا اس معاملے میں ہمارے ساتھ متفق ہے کہ ایران کو اس سے باز رکھنے اور تنہائی کا شکار کرنے کے لیے اس کے خلاف سیاسی اور اقتصادی دبا استعمال کیا جانا چاہیے۔

رے برن نے شام میں اسد رجیم کے اپنی جیلوں میں قیدیوں سے ناروا سلوک کے بارے میں بھی گفتگو کی، انھوں نے کہا کہ افشا ہونے والی تصاویر سے ظاہر ہوتا ہے کہ انھوں نے اپنی جیلوں میں دوسری عالمگیر جنگ کے نازیوں کی طرح کے موت کیمپ بنا رکھے ہیں۔

امریکا دہشت گردی کو اسپانسر کرنے والا ملک ہے،ایران

خیال رہے کہ امریکی ایلچی شام کے ایک سابق فوجی کی فراہم کردہ ہزاروں تصاویر کا حوالہ دے رہے تھے، یہ تصاویر مئی 2011 سے اگست 2013 تک کھینچی گئی تھیں، ان سے ظاہر ہوتا ہے کہ 6786 افراد شامی حکام کے زیر حراست ہر طرح کے تشدد کا نشانہ بنے تھے، اور وہ ان کی اذیتوں کی تاب نہ لا کر موت کے منھ میں چلے گئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں