The news is by your side.

Advertisement

خالد بن سلمان کی امریکی وزیردفاع سے ملاقات، ایرانی خطرے پر گفتگو

ریاض: سعودی عرب کے نائب وزیردفاع شہزادہ خالد بن سلمان کی امریکی وزیردفاع مارک ایسپر سے ملاقات ہوئی اس دوران ایرانی خطرے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق خالد بن سلمان اور مارک ایسپر نے حوثی باغیوں کی یمن میں پیش قدمی پر گفتگو کی اور ایران کی عسکری کارروائیوں پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی وزیردفاع مارک ایسپر مملکت کے دورے پر ریاض آئے ہوئے ہیں، جس کا مقصد خطے میں حالیہ کشیدگی کے خاتمے کے لیے لائحہ عمل تیار کرنا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کا کہنا ہے کہ ایک مشترکہ بیان کے مطابق ملاقات کے دوران سعودی عرب اور امریکا کے تعلقات اور دونوں ملکوں کے درمیان قائم تزویراتی اور عسکری تعاون کا جائزہ بھی لیا گیا۔

اس کے علاوہ مشترکہ طور پر درپیش سیکیورٹی اور دفاعی چیلنجوں، خطرات اور معاملات پر بھی بات چیت ہوئی۔

دونوں شخصیات کے درمیان مشترکہ دل چسپی کے متعدد امور زیر بحث آئے تاکہ کسی بھی نوعیت کے خطرے کا سامنا کرتے ہوئے مشترکہ مفادات کے دفاع اور امن او استحکام کو سپورٹ کیا جا سکے۔

ایران، خطے اور عالمی سلامتی کیلئے خطرہ ہے: سعودی عرب

خیال رہے کہ ستمبر مں سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پر ڈرون حملوں اور اس کے نتیجے میں تیل کی پیداوار میں کی جانے والی کمی کی وجہ سے عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں 19.5 فیصد تک کا ریکارڈ اضافہ ہوا۔

اس ضمن میں سعودی عرب کی فوج کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے ایران کو حملوں کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوتا ہے کہ تیل تنصیبات پر حملوں میں ایرانی ہتھیار استعمال کیے گئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں