The news is by your side.

بھارت کو مذہبی آزادی کی پامالی پر ریڈ لسٹ میں کیوں شامل نہیں کیا؟ امریکی ترجمان سے اے آروائی نیوز کا سوال

واشنگٹن: ترجمان امریکی وزارت خارجہ نیڈ پرائس  نے مذہبی آزادی کی پامالی کی فہرست میں بھارت کا نام شامل نہ کرنے پر واضح جواب دینے سے گریز کیا اور کہا مذہبی آزادی پر تحفظات بھارت تک پہنچاتے رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان امریکی وزارت خارجہ نیڈ پرائس کی پریس بریفنگ میں اے آروائی نیوز کے نمائندے جہانزیب علی نے سوال کیا کہ بھارت کو مذہبی آزادی کی پامالی پر ریڈ لسٹ میں کیوں شامل نہیں کیا گیا۔

جس پر نیڈ پرائس نے کہا کہ سیکریٹری بلنکن نے موصول حقائق پر فیصلہ کیا کہ بھارت کسی لسٹ میں شامل نہ کیا جائے اور نہ ہی خصوصی واچ لسٹ میں شامل کیا جائے۔

امریکی ترجمان کا کہنا تھا کہ مذہبی آزادی سے متعلق بھارت سمیت تمام ممالک سےبات چیت کرتے رہتے ہیں اور مذہبی آزادی کے حوالے سے معلومات دیگر ذرائع سے بھی حاصل کرتے ہیں۔

ترجمان امریکی وزارت خارجہ نے کہا کہ مذہبی آزادی پر تحفظات بھارت تک پہنچاتے رہے ہیں اور بھارت کی حوصلہ افزائی کرتے رہیں گے کہ مذہبی آزادی کا احترام کیا جائے۔

انھوں نے کہا کہ مذہبی آزادی، انسانی حقوق کا احترام ہماری مشترکہ بنیادی اقدار اور جمہوریت کا حصہ ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں