The news is by your side.

Advertisement

نائب صدرسے فلسطینی صدر نے ملاقات منسوخ کی تو اچھا نہیں ہوگا، امریکا کی فلسطین کو کھلی دھمکی

واشنگٹن : امریکا نے فلسطین کودھمکی دی ہے کہ امریکی نائب صدرمائیک پینس سے فلسطینی صدرکی ملاقات منسوخ کرنے کے نتائج اچھے نہیں ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ رواں سال فلسطینی صدرمحمود عباس اورامریکی نائب صدرمائیک پینس کی ملاقات منسوخ ہونا نقصان دہ ہوگا۔

صدرٹرمپ کے مقبوضہ بیت المقدس کواسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کے بعد فلسطینی حکام نے کہا تھا کہ فلسطینی صدر اور امریکی نائب صدرکی ملاقات نہیں ہوگی اور امریکی نائب صدر کو فلسطینی علاقوں میں خوش آمدید نہیں کہا جائے گا۔

اس سے قبل فلسطینی صدرمحمودعباس کا کہنا تھا امریکی فیصلے سے خطے کوخطرات لاحق ہوں گے۔ ایران، مصر، مراکش سمیت دیگرممالک نےبھی امریکی صدرکے فیصلےکی شدید مذمت کی تھی۔


مزید پڑھیں : امریکا نے یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرلیا


یاد رہے کہ امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرلیا، ٹرمپ کے فیصلے پر مسلمان ملکوں کی جانب سے شدید ردعمل کا اظہار کیا جارہا ہے جبکہ مختلف شہروں میں مظاہرے کئے جارہے ہیں۔

مریکا صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ کئی امریکی صدور نے اس اقدام کا سوچا تھا لیکن وہ ایسا نہیں کرسکے اس لیے یہ معاملہ کافی برسوں سے التواء کا شکار تھا جس پر میں آج سخت فیصلہ کرتے ہوئے یروشلم کو اسرائیل کا دارالخلافہ تسلیم کرنے کا اعلان کرتا ہوں اور اس مشکل کام کو انجام تک پہنچانے  پر خوشی محسوس کر رہا ہوں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں