The news is by your side.

Advertisement

آلو بخارے کا استعمال ہڈیوں کیلئے انتہائی مفید قرار

آلُو بخارا ایک خوش ذائقہ پھل ہے جو حیاتین(وٹامن) کا خزانہ ہے، جو ہاضمے کیلے صحت مند مگر ہڈیوں کےلیے انتہائی مفید بتایا گیا ہے۔

امریکا کی پین اسٹیٹ یونیورسٹی میں ہونے والی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ اس پھل کی ایک بڑی خوبی اس کا قبض کشا اور زود ہضم ہونا ہے اور حکیم اسے عمدہ غذا اور بہترین دوا بتاتے ہیں۔

قدرت نے اس قرمزی رنگت والے پھل کو خوب نما بنایا ہے، یہ دیکھنے میں‌ اکثر آتشیں سرخ بھی نظر آتا ہے، اس کا چھلکا نرم اور اندر گودا ہوتا ہے۔

یہ پھل نشاستہ دار اجزا کے علاوہ کیلشیم، پوٹاشیم، فلورین، فاسفورس، امینو ایسڈ، گلوکوز کی وجہ سے صحت بخش اور جسم کے لیے مفید ہے۔

آلو بخارے میں وٹامن اے، بی بھی پائے جاتے ہیں، لیکن یہ پھل وٹامن سی کا خزانہ ہے جو ہمیں کئی طبی مسائل اور پیچیدگیوں‌ سے محفوظ رکھنے کے لیے ضروری ہے۔

پھلوں کی تاثیر اور افادیت سے متعلق کتب میں‌ لکھا ہے کہ آلو بخارے کا مزاج سرد تر ہوتا ہے اور یہ معدہ کی تیزابیت دُور کرنے کے لیے انتہائی مفید پھل ہے، یہ پھل دو سے تین گھنٹوں میں ہضم ہوکر جزوِ بدن بن جاتا ہے۔

ماہرین نے آلو بخارے کو زیادہ ہڈیوں کیلئے زیادہ مفید قرار دیا ہے، اس کی ممکنہ وجہ اس پھل کے کھانے سے ورم اور تکسیدی تناؤ میں کمی ہے اور یہ دونوں عناصر ہڈیوں کی کمزوری کا باعث بنتے ہیں۔

ہڈیوں کی کمزوری یا بھربھرے پن کا مسئلہ کسی بھی عمر کے فرد کو لاحق وہسکتا ہے مگر 50 سال سے زائد عمر کی خواتین میں یہ بہت عام ہوتا ہے، جو دنیا بھر میں 20 کروڑ خواتین کو لاحق ہے اور 90 لاکھ خواتین سالانہ ہڈیوں کے فریکچر کا سامنا کرتی ہیں۔

تحقیق کے کلینکل ٹرائلز میں دریافت کیا گیا کہ روزانہ 100 گرام آلوبخارے (خشک یا تازہ) ایک سال تک کھانے سے کہنی، زیریں ریڑھ کی ہڈیوں کو مضبوط کرتا ہے۔

اسی طرح آلو بخارے کی ورم کش خصوصیات اسے جوڑوں کے امراض کے شکار افراد کے لیے بھی فائدہ مند بناتی ہیں اور صحت مند افراد اسے کھا کر ہڈیوں کو مزید 20 فیصد زیادہ مضبوط بناسکتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں