نجکاری کیخلاف یوٹیلیٹی اسٹورز ملازمین کا ڈی چوک پردھرنا ختم کرنے سے انکار -
The news is by your side.

Advertisement

نجکاری کیخلاف یوٹیلیٹی اسٹورز ملازمین کا ڈی چوک پردھرنا ختم کرنے سے انکار

اسلام آباد : یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کے ملازمین نے ادارے کی نجکاری کیخلاف اسلام آباد کے ڈی چوک پر دھرنا دے دیا نعیم الحق کا کہنا ہے کہ مطالبات تسلیم کرلیے۔

تفصیلات کے مطابق یوٹیلیٹی اسٹورز ملازمین نے اسلام آباد کے ڈی چوک پر دھرنا دے دیا، ملک بھر سے آئے ملازمین پہلے اسٹور ہیڈ آفس میں جمع ہوئے اور بعد ازاں ریلی کی صورت میں اسلام آباد کے ڈی چوک پہنچے۔

دھرنے کے شرکاء ادارے کی نجکاری کیخلاف شدید نعرے بازی کررہے تھے، اس موقع پر مظاہرین نے پارلیمنٹ کی جانب مارچ کی دھمکی بھی دی۔

پولیس نے خاردار تاریں لگا کر سڑک کو بند کردیا، دھرنے میں شریک ملازمین کا کہنا ہے حکومت غریبوں کو خودکشیوں پر مجبور کر رہی ہے، نجکاری کا فیصلہ واپس لیا جائے۔

مقررین کا کہنا تھا کہ کارپوریشن کی نجکاری ہزاروں ملازمین اوراُن کے اہلِ خانہ کا معاشی قتل ہے، صورتحال کی نزاکت کو دیکھتے ہوئے وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق دھرنے کے شرکاء سے ملاقات کیلئے پہنچے۔

شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے  ملازمین کو یقین دہانی کرائی کہ کسی ملازم کو برطرف نہیں کیا جائے گا بلکہ ڈیلی ویجز اور کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کیا جائے گا، انہوں نے مزید کہا کہ یوٹیلٹی اسٹورز ملازمین کو ہیلتھ کارڈ دیئے جائیں گے۔

نعیم الحق نے کہا کہ ملازمین کے مطالبات تسلیم کرلیے گئے ہیں، مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد کی وطن واپسی پر نوٹیٖفیکشن جاری کردیں گے، جس کو مظاہرین نے مسترد کرتے ہوئے کہا کہ نوٹیفیکیشن کے اجراء تک دھرنا ختم نہیں کریں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں