The news is by your side.

Advertisement

وینزویلا بحران، جون گائیڈو وطن واپس پہنچ گئے، گرفتاری کا خطرہ

کراکس: وینزویلا کے اپوزیشن لیڈر اور خود ساختہ صدر جون گائیڈو وطن واپس پہنچ گئے، انہیں گرفتار کیا جاسکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جون گائیڈو نے دس دن کا لاطینی امریکی ملکوں کا دورہ کیا، جس کے بعد وہ وطن واپس پہنچے ہیں، خدشہ ہے کہ حکام کی جانب سے گرفتاری کے احکامات جاری کیے جاسکتے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ رواں سال 22 فروری سے خودساختہ صدر لاطینی امریکی ملکوں کے دورے پر تھے، عدالت عظمٰی کی جانب سے ان پر سفری پابندی بھی عائد ہے۔

دورے کا مقصد ملک میں جاری سیاسی بحران کے پیش نظر امداد حاصل کرنا تھا، جس کے لیے انہوں نے اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کی اور ملکی صورت حال سے آگاہ کیا۔

وطن واپسی پر ایئرپورٹ پر عوام کی کثیر تعداد موجود تھی، جو اپوزیشن لیڈر کے حق میں نعرے بازی کررہی تھی، اس موقع پر جون گائیڈو کا کہنا تھا کہ ملک کی سالمیت اور بہتر مستقبل کے لیے ہر حد تک جائیں گے۔

دوسری جانب امریکا نے وینزویلا کی حکومت کو خبردار کیا ہے کہ وہ جون گائیڈو کی وطن واپسی پر ان کے خلاف کسی کارروائی سے باز رہے، بصورت دیگر سخت اقدامات کیے جاسکتے ہیں۔

بحران دوچار وینزویلا کے لیے جرمنی کا لاکھوں‌ ڈالرز امداد اعلان

قبل ازیں گائیڈو نے اپنے حامیوں سے درخواست کی کہ وہ ان کی آمد کے موقع پر ملک میں بڑے پیمانے پر مظاہرے کریں تاکہ حکومت پر دباؤ بڑھایا جا سکے۔

واضح رہے کہ وینزویلا میں 23 جنوری کو اپوزیشن لیڈر اور پارلیمںٹ کے اسپیکر جون گائیڈو نے خود کو عبوری صدر قرار دیا تھا جس کے بعد امریکا اور بعض دوسرے علاقائی ممالک نے صدر نکولس مادورو کی جگہ گائیڈو کو ملک کا عبوری صدر تسلیم کرلیا ہے۔

بعد ازاں امریکا میں تعینات وینزویلا کے ملٹری اتاشی کرنل جوش لوئس سلوا کی ایک ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر جاری ہوئی تھی جس میں وہ نکولس ماڈورو سے علیحدگی اختیار کرتے ہوئے اپوزیشن رہنما جون گائیڈو اعلان وفاداری کررہے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں